کے الیکٹرک کا عملہ شہریوں کے ہاتھوں یرغمال!

کراچی -کراچی میں ہر طرف بجلی کی دہائی ، کورنگی اور گلستان جوہر بلاک سات میں بجلی کی طویل بندش نے لوگوں کو عذاب میں مبتلا کر دیا ۔ مشتعل مظاہرین نے ہنگامہ آرائی کی اور سڑکوں پر ٹائر جلائے ۔ کورنگی میں کے الیکٹرک کے عملے کو بھی یرغمال بنا لیا۔ ٹھنڈے ایوانوں میں بلند و بانگ دعوے ، تقریروں میں ہزاروں میگاواٹ بجلی کے قصے سنائے جاتے ہیں مگر شہری پھر بھی محروم ہیں۔

عوام پریشان ہیں کہ کس سے فریاد کریں ان کا کوئی پرسان حال نہیں ۔ دنیا کو چاند پر قدم رکھے کئی برس ہو گئے وائے رے قسمت کراچی میں بجلی گھروں تک نہ پہنچ سکی ۔ شدید گرمی میں شہری بے حال ہونے لگے تو جلال میں آئے شہریوں نے دھمال ڈال دی ۔ مشتعل ہجوم نے "کے الیکٹرک "کی ایک گاڑی اور عملے کو بھی یرغمال بنا لیا ۔ پولیس موقع پر پہنچی تو مظاہرین نے نعرے بازی شروع کر دی ۔ پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لئے لاٹھی چارج کیا ۔ بپھرے شہریوں کا کہنا تھا کہ "کے الیکٹرک "نے احتجاج کے سوا کوئی راستہ نہیں چھوڑا۔ کراچی میں غیر اعلانیہ اور لامحدود لوڈشیڈنگ نے شہریوں کو ذہنی مریض بنا رکھا ہے۔ بجلی کی قلت کے ساتھ ساتھ پانی بھی نہیں مل پا رہا جس کی وجہ سے عبات میں بھی خلل پڑ رہا ہے :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *