تیمور رضا اورعامر لیاقت کےلیے الگ قانون؟

syed arif mustafa

یہ بات یقینناً بہت مسرت انگیز یہے کہ اب فرقہ وارانہ معاملات میں اشتعال انگیزی کو ہوا دینے والوں کی بھی شامت آن لگی ہے اور دوروز قبل پہلی بار ایک گستاخ صحابہ ملعون تیمور رضا کو بہاولپور کی انسداد دہشتگردی عدالت سے سزائے موت کا جو فیصلہ سنایا گیا ہے وہ گستاخان صحابہ کو لگام دینے کا سبب بن سکے گا - لیکن یہاں میرا سوال یہ ہے کہ کیا پاکستان کے قانوں میں سزاؤں کا تعین مرتبے اور نام و مقام کو سامنے رکھ کے کیا جاتا ہے ،،، اگر صحابہ کی شان میں گستاخی کی سزا تیمور رضا کو دی جارہی ہے تو عامر لیاقت کو کیوں نہیں کہ جسکی متعدد اصلی ویڈیو کلپس نیٹ پہ آج بھی موجود ہیں کہ جس میں اسنے حضرت عمر حضرت ابوبکر اور حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہم پہ تبرہ بازی کی ہے - نیٹ پہ موجود ایسی متعدد ویڈیو کلپس میں سے دو کو میں یہاں بطور ثبوت لگا رہا ہوں اور ان ویڈیوز کے اصلی ہونے کی تصدیق فارنزک طریقوں سے باآسانی کی جاسکتی ہے

میرے نزدیک فرقہ وارنہ اختلافات کو ہوا دینے کی کوئی بھی کوشش دراصل فرقہ وارانہ دہشتگردی ہی کی ایک شکل ہے اور یوں کسی ایک خبیث کی بدعملی کا خمیازہ نجانے کتنوں کو بھگتنا پڑجاتا ہے- لاریب اہل اسلام نہ صرف ناموس رسالت بلکہ ناموس صحابہ کے لیئے بھی کٹ مرنے کا جذبہ رکھتے ہیں کیونکہ نبیء کریم نے اپنے صحابہ کو آسمان پہ جگمگاتے تاروں کے مثل قرار دیا ہے- صحابہ کے خلاف بدزبانی پہ ایسی سخت سزائیں دینا لازمی ہے اور اس سلسلے میں کسی کے نام اور حیثیت کو خاطر میں لانے کا مطلب یہ ہے کہ آپ قانون میں بھی دو عملی کررہے ہیں- مناسب یہ ہے کہ عامر لیاقت کی ان ویڈیوز کا بھی جائزہ لیا جائے اورانکے معاملے کو بھی پوری احتیاط سے قانونی کارروائی کے عمل سے گزارا جائے - موصوف اس ضمن میں معافی مانگنا تو دور ان ویڈیوز کی اصلیت سے ہی منکر ہیں لہذا بہتر ہے کہ اب قانونی طور پہ دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی بھی ہوہی جائے

اتحاد بین المسلمین کو برباد کرنے کی کوشش خواہ قبل فرقہء جعدفریہ کے قتل عام میں ملؤث اکرم لاہوری، ریاض بسرا اور ملک اسحاق کرے یا کوئی اور ،،، یا کوئی ناموس رسالت یا ناموس صحابہ کے بارے میں گستاخی کرے، اس سے چھٹکارا پالینا اور عبرتناک انجام کوپہنچانا ہی مسئلے کا لازمی حل ہے اور اس ضمن میں اپنے پرائے اور نامور و بے نشاں کی کوئی تخصیص روا نہیں رکھنا چاہیئے-

[email protected]

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *