میرے شہر کی مٹی زرخیز ہے ۔۔۔

عبد الحنان چوہدری
abdul hannan chaudhry
اقبال فرماتے ہیں مٹی میں ذرا نمی آجائے تو بڑی زرخیز ہوجاتی ہے اسکا عملی نمونہ میں نے اپنے شہر اور علاقہ کے لوگوں میں دیکھا کہ چہارم کلاس کی بات ہے کہ ایک تعلیمی گھرانے سے تعلق رکھنے والا بچہّ کسی اور سکول سے شہر کے معروف مادرے علمی اسلامیہ پرائمری سکول آیا چند دنوں کے بعد کلاس انچارج استازیم اللہ دتہ صاحب نے نووارد طالب علم کے جسمانی خدوخال دیکھتے ہوئے حکم صادر فرمایا کہ اتنا چھوٹا بچہّ چوتھی کلاس میں کیسے پہنچا اسے کل سے دوسری کلاس میں بٹھایا جائے بچہّ تھا فہم کی منزل سے ابھی کوسوں دور تھا ذرا دلبرداشتہ ہوا بمشکل چھٹی کا انتظار کیا اور اگلے روز اپنے دادا جان کو لیئے کمرہ جماعت میں آن پہنچا کلاس میں تین چار اساتذہ بیٹھے تھے جب کمرہ جماعت میں بچےّ ّ کیساتھ بزرگ شخصیت کو دیکھا تو گھٹنوں کو ہاتھ لگاتے ہوئے اپنی نشستیں چھوڑ کر کھڑے ہوگئے آنیوالی بزرگ شخصیت کمالیہ کے معروف استاد الاساتذہ ریٹائرڈ ٹیچر رحمت علی غازی صاحب تھے اساتذہ کرام نے آداب بجالاتے ہوئے وجہ آمد پوچھی تو بزرگ شخصیت یوں گویا ہوئے بچےّ ّ میں آپ نے کونسی تعلیمی کمی دیکھی جو دو کلاسز پیچھے کرکے دو تعلیمی سال ضائع کرنے کا فرمایا سینئر کے احترام میں اساتذہ نے بیک زبان فرمایا آپ تشریف لانے کی زحمت کی اس پر تہہ دل سے معذرت ۔ہم آپکے بچےّ کو اسی کلاس میں رکھیں گے۔ طالب علم کے دادا نے کڑک دار جواب میں فرمایا نہیں ہرگز نہیں آپ بچےّ کا ٹیسٹ لیں اسکی ذہنی تعلیمی قابلیت کی پرکھ کریں اگر یہ آپکی مطلوبہ قابلیت پر پورا اترے تو اسکا حق اسی جماعت میں بیٹھنا ہے اگر کوئی کمی نظر آئے تو اسکو لمحہ بھر کا توقف کیئے بغیر پچھلی جماعت میں بٹھادیا جائے۔ بچےّ کا ٹیسٹ لیا گیا اساتذہ کی ٹیم نے تندوتیز سوالات کیئے مگر بچہّ بلاکا ذہین وفطین نکلا اساتذہ انگشت بدنداں رہ گئے خیر بات لمبی ہوگئی وہ میرا ہم جماعت گزشتہ عید کے تیسرے دن سر راہ مجھے ملا اور یہ فرحت افزا خبر سنائی کہ عنقریب بطور اسسٹنٹ ایجوکیشن آفیسر تعیناتی ہوجائیگی خوشی کی خبرتھی میٹھے کا وعدہ اگلی ملاقات پہ چھوڑا اور رخصت ہوئے۔ آج پیغام موصول ہوا میرا اعلیٰ تعلیم یافتہ دوست محمد عمار ناصر اسسٹنٹ ایجوکیشن آفیسر مرکز اسوار شاہ تعینات ہوگیا ہے مسرت انگیز خبر ہے پروردگار میرے اس بھائی کو اپنی ذمہ داریاں احسن طریقے سے ادا کرنے کی توفیق دے۔ عرصہ دراز سے اس مٹی کی خدمت کرنے والی فیملی کے محمد عمار ناصر۔ ٹیچر محمد ناصر انصاری کے فرزند ارجمند،ٹیچر محمد توقیر ناصر اور ٹیچر محمد وقار ناصر کے بھائی اور ریٹائرڈ ٹیچر رحمت علی غازی کے پوتے ہیں۔ بلاشبہ فاضل دیوان کمالیہ کی انصاری برادری کی تعلیمی میدان میں خدمات قابل تعریف ہیں۔ محترم فاضل رحمانی صاحب محترم اقبال خاور انصاری صاحب اور نسل نوکی تعلیمی آبیاری کیلئے کمربستہ فاضل رحمانی صاحب کے فرزند ارجمند برادر محمد عرفان انصاری سمیت وہ بہت سے نام جو میں نہیں جانتا علاقہ بھر کیلئے قابل تقلید اور قابل فخر ہیں پروردگار تمام احباب کو کامیابیوں سے نوازے۔ ہم تو دشت حیات کے تھپیڑے جھیل رہے ہیں مگر خوشی ہوتی ہے جب کوئی اپنا کچھ ایسا کرے یا کسی ایسے مقام پر پہنچے تو دل کے آنگن میں خوشی مسرت کی لہر سی آجاتی ہے۔ پروردگار ہمیں آسانیاں دے اور آسانیاں بانٹنے کی توفیق دے ۔آمین۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *