’’مستقبل کیلئے ہمارا بڑا عہد‘‘۔۔۔۔۔گیٹس کا سالانہ خط2015ء ( قسط نمبر 17)

bilmalinda2 بل اور ملنڈا گیٹس

انسانیت کی مدد کیلئے لوگوں تک اپنی آواز پہنچانا اور ان کی آواز سننا ہی ’’عالمی شہری‘‘ کے ہمارے پروگرام کا مقصد ہے، اور آپ گلوبل سٹیزن ڈاٹ اورگ پر سائن اپ ہو کے اس منصوبے کا حصہ بن سکتے ہیں۔ آپ اس بارے میں معلومات بھی حاصل کر سکتے ہیں کہ آپ کس طرح دوسروں کی مدد کر سکتے ہیں۔اپنی معلومات و تجربات ہم تک پہنچا سکتے ہیں۔ اور ایسے ہی مسائل کا خیال رکھنے والے لوگوں اور تنظیموں کے ساتھ رابطہ بھی کر سکتے ہیں۔ لیکن ایک عالمی شہری ہونے کا مقصد صرف ایک تنظیم کا رکن ہونا نہیں ہے، اس کا مطلب ایک ایسی تحریک کا رکن ہونا ہے جو کئی مؤثر تنظیموں سے مل کر بنی ہو۔ ان مؤثر تنظیموں میں کئی عالمی گروہ بھی شامل ہیں جیسے سوکس، سیو دی چلڈرن، دی ون کمپین، ایکشن ایڈ، اوکسفیم اور گرین پیس ساتھ ہی ساتھ سری لنکا سے لے کر ساؤتھ افریقہ تک پھیلی ہوئی چھوٹی چھوٹی قومی تنظیمیں بھی۔ ان تنظیموں کے لاکھوں ارکان بھی عالمی شہری ہی ہیں جو مختلف عالمی مسائل کے حل کیلئے کام کر رہے ہیں۔
رواں برس عالمی شہریوں کو ایک خاص اہم کردار اداکرنا ہے۔ ستمبر میں، اقوام متحدہ چند ایسے مقاصد پر متفق ہو جائے گی جو اگلے 15 برس میں غریبوں کی فلاح کیلئے پورے کئے جانے ضروری ہیں۔ اقوام متحدہ نے اس سے قبل، 2000ء میں بھی کچھ ایسے مقاصد مقرر کئے تھے اور اگرہم میں سے کوئی انہیں پورا کرنے کی کوشش کرتا تو یہ بھی بہترین نظریات تھے۔ ان مقاصد میں بنیادی توجہ اس بات پر مرکوز کی گئی تھی کہ ایک پیداواری زندگی کی بنیادی ضرورتیں پوری کی جاتیں، جیسا کہ اچھی صحت اور تعلیم حاصل کرنے کا موقع اور معاشی مواقع ۔ ہمیں امید ہے کہ رواں برس کے لئے طے کئے جانے والے مقاصد ان مقاصد کی تکمیں کاکام وہیں سے شروع کریں گے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *