شوہر اور شیر خوار بچے کے ساتھ جاتی خاتون جنسی زیادتی کا شکار!

نئی دہلی -بھارت میں خواتین کو جنسی ہوس کا نشانہ بنانا معمول کی بات بن چکا ہے مگر ہر روز اس قدر بھیانک اور خوفناک واقعات سامنے آتے ہیں کہ کسی بھی انسان کے رونگٹے کھڑے ہو جاتے ہیں اور دل خون کے آنسو رونے لگتا ہے۔

ایسا ہی ایک بھارتی ریاست اترپردیش میں پیش آیا جہاں 4ملزموں نے ایک 30 سالہ خاتون کو اس کے شوہر کے سامنے جنسی ہوس کا نشانہ بنا ڈالا اور جب خاتون نے مزاحمت کرنے کی کوشش کی تو ملزموں نے اس کے شیر خوار بچے کو مارنے کی دھمکی دی اور یوں ممتا عزت کے تحفظ پر غالب آ گئی۔
بھارتی خبر رساں ادارے کے مطابق اترپردیش کے علاقے مظفر نگر میں ایک 30 سالہ خاتون اور اس کا شوہر اپنے 3 ماہ کے بچے کو ماہر امراض بچگان کے پاس لے کر گئے تھے اور اس کا چیک اپ کروانے کے بعد موٹر سائیکل پر واپس آ رہے تھے جب ایک کار میں سوار 4 مسلح ملزموں نے انہیں روک لیا۔
انہوں نے شیر خوار بچے کو خاتون سے چھینا اور اس کے شوہر کو تشدد کا نشانہ بنا کر درخت کے ساتھ باندھ دیا۔ اس کے بعد وہ خاتون کو گھسیٹتے ہوئے قریب ہی گنے کے کھیتوں میں لے گئے اور جنسی ہوس کا نشانہ بنا ڈالا۔ خاتون نے اس دوران مزاحمت کی کوشش کی تو ملزموں نے شیر خوار بچے کو مارنے کی دھمکی دی۔
ملزم خاتون کی عزت تار تار کرنے کے بعد فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے جبکہ انہوں نے کسی کو بھی بتانے کی صورت میں دونوں کو جان سے مارنے کی دھمکی بھی دی۔ ملزموں کے فرار ہونے کے بعد متاثرین نے مدد کیلئے چیخ و پکار کی تو قریبی گاﺅں میں رہنے والے کسان وہاں پہنچ گئے جنہوں نے ان کی دادرسی کی۔
واقعے کی اطلاع ملنے پر پولیس متاثرہ خاندان کو ہسپتال لے گئی جہاں خاتون کا علاج اور میڈیکل کرایا گیا جبکہ اس کے شوہر کو بھی طبی امداد دی گئی۔ ایس پی رورل مظفر نگر اجے ساہ دیو کے مطابق ملزموں کی تلاش جاری ہے، ان کا کہنا ہے کہ ”ہم خاتون کی میڈیکل رپورٹ کے منتظر ہیں۔ چار ملزموں کیخلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے اور تحقیقات جاری ہیں :-“

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *