سیاسی شعور

وہ تمام سیاستدانوں کے خلاف نہیں ۔ پاپولر سیاستدانوں کے خلاف ھیں۔ وہ سیاست کے خلاف نہیں ۔ سیاست تو خود بھی کرتے ھیں ۔ سیاسی عمل کے خلاف ھیں ۔ وہ سویلین برتری کے خلاف نہیں ۔ آئین کے خلاف ھیں۔ جو سویلین کو اختیار دیتا ھے۔ وہ عوام کے خلاف نہیں ۔ عوامی شعور کے خلاف ھیں۔ جو عوام کو طاقت کا احساس دیتا ھے۔ وہ پریشر گروپس کے خلاف نہیں ۔ وہ خود ایک پریشر گروپ ھیں۔ وہ ان پریشر گروپس کے خلاف ھیں۔ جو انہیں چیلنج کرتا ھے۔ جو پریشر گروپ سویلین کو چیلنج کرتا ھے۔ یہ اسے تھپکی دیتے ہیں۔ وہ کرپشن کے خلاف نہیں ۔ کرپشن کو تو پروموٹ کرتے ہیں۔ اور پھر اسے بطور ھتیار استعمال کرتے ہیں۔ وہ دشمن ختم نہیں کرتے۔ مزید دشمن پالتے ھیں۔ تاکہ ان کی ضرورت بنی رھے۔ اور وہ معاشی ترقی کے خلاف نہیں ۔ ترقی تو وہ کر رھے۔ وہ تمہاری ترقی کے خلاف ھیں ۔ کہیں تم ان کے ھاتھوں سے نہ نکل جائو۔ اور اگر تمہیں ان باتوں کی سمجھ آ جائے۔ تو گویا تم نے سیاسی شعور پا لیا۔ ورنہ تم ایک وہ شخص ھو۔ جو سمندر میں چھلانگ لگاے اور سوکھا واپس نکل آئے۔ تم سوکھ چکے ھو میری جان

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *