عامر لیاقت کی دوسری شادی

عامرلیاقت کی دوسری شادی کی خبر کو بریک ہوئے قریباؐ ایک ہفتہ ہوچلا ہے اور ابھی تک موصوف کی تردید سامنے نہیں آئی ۔ اس ضمن میں ان کا ٹؤیٹر اکاؤنٹ بھی قطعاؐ خاموش ہے کہ جہاں وہ اپنی زات سے کسی بھی خبر پہ فوری ردعمل کا اظہارجاری کرتے رہتے ہیں ۔۔۔۔اور خود سے متعلق اتنی بڑی خبر پہ انکی کامل خاموشی کو بالواطہ توثیق کے سوا کچھ اور نہیں سمجھا جاسکتا   اگر دوسری شادی والی یہ خبر غلط نہیں تو پھر یوں سمجھ لیجیئے کہ چیلے نے گرو جی کا گیان گھول کے پی لیا ۔۔۔ عمران خان کو بھی پہلی شادی کے بعد ہر شادی کا اعلان کرنے میں بڑی دیر لگی تو یوں لگتا ہے کہ عامر لیاقت اس سے بھی آگے جاسکتا ہے اور کوئی نومولود گود میں آنے سے پہلے اس خوشی کا اعلان کرنا معیوب
سمجھے گا- تاہم گرو کو تیسری شادی تک آتے آتے چھیاسٹواں برس آن لگا اور یہاں تک آپہنچتے ہوئے 19 برسوں میں چیلا نجانے کیا کچھ نہ کر دکھائےگا- موصوف دائم ٹھرکی تو پہلے سے مشہور چلے آرہے ہیں لیکن اب انکی دوسری شادی کی خبریں بھی منظر عام پہ آچکی ہیں اور اس ضمن میں میڈیا سے متعلق ایک معتبر ویب سائٹ عمران جونیئر ڈاٹ کام پہ کافی چشم شاء مواد موجود ہے جو خاصی حد تک ناقابل تردید معلوم ہوتا ہے۔۔۔ اور یہ جو بات ہے انکی دوسری شادی کی ، تو دوسری شادی ہرگز کوئی گناہ نہیں لیکن اگر یہ راز میں رکھی جائے تو پھر ایسی خفیہ شادیاں کبھی نہ کبھی شوقین نوشے میاں کو پھنسوا دیتی ہیں اور بہت ذلیل و خوار کرواتی ہیں اور ابکے عامر لیاقت حسین بھی اسکا شکار ہوتے نظر آتے ہیں ۔۔ ویسے اس شادی سے ہٹ کر بھی اگر دیکھا جائے تو بلاشبہ عامر لیاقت کی شخصیت رنگینیء مزاج اور سنگینیءگفتار کا مرقع ہے اور پاکستانی میڈیا میں بیک وقت علامہ بننے اور پلے بوائے نظر آنے کی کوشش عامر لیاقت اور ساحر لودھی کے سوا اور کسی اینکر نے نہیں کی ۔۔۔ تاہم ساحر لودھی اس رستے پہ دو ہی قدم چل کے منہ کے بل گرگئے کیونکہ وہ نہ تو نہ عالم کی دستار فضیلت ہی اپنے سر پہ سجاسکے اور
نہ ہی شیخ الاسلام کی اونچی کرسی پہ بیٹھ کے بلبلاتی دعاؤں کی نوبت لاسکے ۔۔۔ دوسری طرف عامر لیاقت تو اب ایسی رقت آمیز پرفارمنس کے کم نگ پتہرفارمر کہلانے کے مقام تک جاپہنچے اور اب تو مقدس راتوں میں انکی لائیو نشر ہوتی تڑپتی دعاؤں میں کمرشیل گڑگڑاہٹ کی مقدار انکے معاوضے کے چیک میں بھری گئی رقم سے راست متناسب ہی ہوا کرتی ہے ۔۔۔ لیکن جہانتک پلے بوائے والے امیج کا تعلق ہے تو اس
شعبے میں بھی انہوں نے بڑا نام کمایا ہے اور مختلف پروگراموں میں فلمی و غیرفلمی پریوں سے انکے بیتابانہ معانقے اور مصافحے کسی سے پوشیدہ نہیں ۔  عامر لیاقت کی دوسری مبینہ شادی کی خبر کے اثرات ویسے تو ان سے جڑے ہر معاملے پہ مرتب ہونگے لیکن انکا فوری اثر انکے انتخابی مستقبل پہ بھی پڑسکتا ہے کیونکہ انہوں نے اپنے کاغذات نامزدگی میں اس دوسری مبینہ بیوی کا کوئی تذکرہ نہیں کیا ہےاور ابھی چند روز پیشتر پی پی پی سندھ کے صدر اور سابق صوبائی وزیر نثار کھوڑو کوایسےہی جرم کی پاداش میں اپنے کاغذات نامزدگی کے استرداد کی سزا مل چکی ہے اور وہ تیسرا نکاح نامہ بغل میں دبائے فریادیں کرتے پھر رہے ہیں- جہانتک تعلق ہےانکی اس دوسری مبینہ بیوی کا ، تو لیاقت آباد یوسی
تھری کی یہ خوبرو و طرار موصوفہ کافی عرصے سے عامر لیاقت کی ٹیم کا حصہ ہیں اور انکی خاص دوست ہونے کی شہرت کی حامل ہیں اور وہ بھی اس حد تک کہ پروگرام کی ریکارڈنگ مکمل ہونے بعد عامر لیاقنت جیسے بدمزاج نے انہیں متعدد بار انہیں اپنی گاڑی میں بٹھا کے خود انکے گھر ڈراپ کیا ہے جو کسی بھی دوسرے ساتھی فرد کے مقابلے میں ایک واضح امتیازی رویہ تھا۔۔ اور اب تو یار لوگ انکے تبدیل شدہ
شناتی کارڈ کا عکس بھی نکال لائے ہیں کہ جس میں انکا نام یکایک طوبیٰ انور سے طوبیٰ عامر ہوگیا ہے جبکہ ابھی تک انکی شادی کا کوئی باضابطہ اعلان بھی نہیں ہوا ۔۔ اطلاعات کے مطابق انکا نکاح کئی ماہ قبل مولانا عبدالقادر نے پڑھایا اور عامر کی ٹیم کے دو برخوردار پروڈیوسروں علی امام اور عبدالوہاب نے گواہان کے کردار نبھائے ہیں اور اب تو واقفان حال کے مطابق معاملہ امید پروری تک جاپہنچا ہے ۔۔۔ ان موصوفہ سے قبل بھی رنگین مزاج عامرلیاقت کئی خواتین پہ ڈوارے ڈالتے پائے گئے ہیں جن میں انکی ٹیم کا حصہ رہی ایک ڈاکٹر کا نام بھی
سامنے آتا رہا ہے کہ جو انکے ساتھ شریک اینکر بھی رہی ہیں اور جن سے عامر نے لائیو ریکارڈنگ میں کئی بار بہت تکلف ہونے بلکہ عشق جھاڑنےکی بھی شدید کوششیں کی لیکن اس سیانی و دلکش ڈاکٹرنی نے عامر لیاقت کی ویسی خاطر خواہ جوابی حوصلہ افزائی نہیں کی تو وہ جلد ہی ان سے مایوس بھی ہوگئے تھے-  عامر لیاقت کی پہلی اہلیہ بشریٰ کا رویہ اس دوسری شادی کی ضمن میں کیا ہوگا وہ تو وقت ہی بتائے گا لیکن بشریٰ سے عامر کے ازدواجی حالات بہت عرصے سے ناخوشگوار چلے آرہے بتائے جاتے ہیں کیونکہ وہ شوبزنس میں اپنا مقام بنانے کی متمنی تھیں لیکن عامر لیاقت نے انہیں اسکی اجازت نہ دی تھی جبکہ شادی سے قبل وہ شو بزبس میں قدم رکھ چکی تھیں اور 90 کی دہائی کے مقبول آئیٹم سونگ ' تو ہولے ہولے رکھنا قدم او صنم ' میں بطور گلیمر گرل ، وہ بھرپور رقص آمیز پرفارمنس دے چکی ہیں جوکے آج بھی نیٹ پہ دستیاب ہے ۔۔ لیکن ان دنوں وہ وکالت کی تعلیم مکمل کرکے قانونی پریکٹس کی پریکٹس کررہی ہیں ۔۔۔ گزشتہ دنوں بشریٰ کے حوالے سے یہ خبر بھی سامنے آئی تھی کہ انہوں نے چیئرمین پیمرا کا انٹرویودیا تھا اور اس میں جب ان سے یہ پوچھا گیا کہ اگر انہیں اس منصب پہ کام کرنے کا موقع مل جائے تو وہ بھلا کیسے دوسرے چینلوں کے ساتھ متوازن اور منصفانہ برتاؤ کرسکیں گی جبکہ خود انکے شوہر ایک چینل کا حصہ ہیں تو وہاں
مبینہ طور پہ انہوں نے یہ بتایا تھا کہ انکی عامر لیاقت سے علٰیٰحدگی ہوچکی ہے۔۔۔ اگر ایسا ہے تب بھی جبتک قانونی طور پہ باضابطہ یہ علیحٰددگی نہیں ہوجاتی تب تک بھی عامر کو دوسری شادی کے لیئے ازروئے قانون ( فیملی لاز آرڈیننس 1981 ) بشریٰ سے اجازت لینی ضروری تھی اور اگر انہوں نے اسکا اہتمام ضروری نہیں سمجھا تو اب بشریٰ بی بی انہیں حسب قانون جیل بھجوا سکتی ہیں۔۔ بہرحال اب گرو ہو یا چیلا ، دونوں کی زندگی میں انکی اپنی اپنی بشراؤں کا کردار نہایت اہم موڑ لینے والا ہے اور یہ مرحلہ اب کوئی زیادہ دور بھی نہیں رہ گیا ہے.

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *