پانی، بجلی اور چار دیواری سے محروم، ملک بھر میں ہزاروں پولنگ اسٹیشنز غیر محفوظ

اسلام آباد: الیکشن کمیشن عام انتخابات کے سلسلے میں بہترین انتظامات کے اپنے احکامات پر عملدرآمد کرانے میں ناکام ہوگیا اور انتخابات سے قبل ہزاروں پولنگ اسٹیشن غیر محفوظ ہیں۔

ذرائع کےمطابق الیکشن کمیشن کی جانب سے عام انتخابات کے لیے بہترین انتظامات کی بار بار ہدایات کے باوجود صوبوں نے احکامات ہوا میں اڑا دیئے اور کمیشن اپنے احکامات پر عملدرآمد نہیں کراسکا ہے۔

ذرائع کا کہناہے کہ چاروں صوبوں میں ہزاروں پولنگ اسٹیشن غیر محفوظ اور بنیادی سہولتوں سے محروم ہیں جہاں پانی اور بجلی سمیت چار دیواری تک موجود نہیں ہے اور ایسے پولنگ اسٹیشنوں کی تعداد 4 ہزار 945 ہے۔

الیکشن کمیشن کے ذرائع کے مطابق چار دیواری کے بغیر سینکڑوں پولنگ اسٹیشنز حساس کیٹگری میں شامل ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہےکہ سندھ میں اس طرح کے سب سےزیادہ پولنگ اسٹیشنز کا انکشاف ہوا ہے جہاں 17 ہزار 747 پولنگ اسٹیشنوں میں سے 3 ہزار 688 پر چاردیواری اور پانی بجلی جیسی سہولیات نہیں ہیں۔

بلوچستان کے 4 ہزار 420 پولنگ اسٹیشنوں میں سے 576 اسٹیشنز، خیبرپختونخوا کے 12 ہزار 634 میں سے 570 اسٹیشنز اور پنجاب کے 107 پولنگ اسٹیشنز مطلوبہ معیار کے مطابق نہیں ہیں۔

ذرائع کے مطابق وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں بھی مطلوبہ معیار پر پورا نہ اترنے والے پولنگ اسٹیشنوں کی تعداد 4 ہے۔

الیکشن کمیشن نے صوبائی حکومتوں کو پولنگ اسٹیشنز پر چار دیواری، پانی اور بجلی سمیت دیگر سہولیات کی ہدایات کی تھیں۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *