روسی جارحیت کے خلاف مزاحمت: امریکہ یوکرین فوجی مشقوں کا آغاز

US ukrain یوکرین: امریکہ اور یوکرین نے پیر کے روز سے مشترکہ فوجی مشقوں کا آغاز کر دیا ہے۔ ان فوجی مشقوں کا مقصد، مشرق میں موجود روس نواز علیحدگی پسندوں کے اچانک حملوں کے خلاف یوکرین کے دفاع کو مضبوط بنانا ہے۔
لوائیو کے مغربی علاقے میں موجود ایک فوجی چوکی پر، برستی بارش میں خطاب کرتے ہوئے، یوکرین کے صدر پیٹرو پورو شینکو نے کہا کہ غیرملکی حملوں سے بچنے کیلئے، ملک کی مسلح افواج کی نئے سرے سے تعمیر نو ضروری ہے۔
’’بے خوف محافظ۔2015ء‘‘نامی ان مشقوں کے آغاز پر روس کی جانب سے شدید ردعمل کا اظہار کیا گیا ہے اور اس نے ان مشقوں کو خطے میں عدم استحکام پیدا کرنے کی ایک بڑی ممکنہ وجہ قرار دیا ہے۔
ماسکو، یوکرین میں علیحدگی پسند مسلح بغاوت کو جنم دینے اور اس کی حمایت کرنے میں اپنی شمولیت کے اضافہ پذیر ثبوتوں کو مسلسل مسترد کرتا رہا ہے۔یاد رہے کہ گزشتہ ایک بر س کے دوران، ا س مسلح بغاوت کے سبب یوکرین میں اب تک6100سے زائد افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔
دیگر فوجیوں کے ساتھ، گزشتہ ہفتے امریکی فوج کے 300غوطہ خور بھی یوکرین پہنچے ہیں جویوکرینی فوج کے 900سپاہیوں کو ہوائی جہازوں سے غوطہ لگانا سکھائیں گے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *