نیب لاہور کا علیم خان کے دفتر پر چھاپہ، ریکارڈ قبضہ میں لے لیا

 لاہور: قومی احتساب بیورو (نیب) لاہور کی جوائنٹ انوسٹی گیشن ٹیم نے پاکستان تحریک انصاف کے رہنما علیم خان کے گلبرگ کے علاقے میں واقع دفتر پر چھاپہ مار کر ریکارڈ تحویل میں لے لیا۔

ذرائع کے مطابق دفتر پر چھاپہ کے دوران نیب اہلکاروں نے فارن بینک اکاؤنٹس، دبئی میں فلیٹس اور چیکس کی معلومات اکٹھی کرلی گئیں جبکہ علیم خان کی ایک درجن سے زائد جائیدادوں کا ریکارڈ بھی حاصل کر لیا گیا۔

نیب نے علیم خان کے پرسنل اسسٹنٹ طارق شبیر کے دفتر سے بھی اہم دستاویزات قبضہ میں لی ہیں جبکہ علیم خان کے مبینہ فرنٹ مین عمر فاروق منان اور نمیر حمید خان سے متعلق ریکارڈ بھی قبضہ میں لیا گیا ہے۔

نیب لاہور نے پراپرٹی کا ریکارڈ حاصل کرنے کے بعد علیم خان کے خلاف تحقیقات مزید تیز کردی ہے اور احتساب عدالت کو بھی ریکارڈ فراہم کردیا ہے۔

ادھر  علیم خان کی چھپائی گئی پراپرٹیوں کا ریکارڈ حاصل کرلیا جس کے مطابق انہوں نے 2002 میں اپنی جائیدادوں میں صرف ایک پلاٹ ظاہر کیا جو انہیں والدہ کی جانب سے ملا تھا، اور انہوں نے اپنی پراپرٹی کو ظاہر ہی نہیں کیا۔

دوسری جانب ذرائع کے مطابق علیم خان نے نیب کے چھاپے کے خلاف احتجاج کیا ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *