سبین محمود کا قاتل آئی بی اے کا گریجویٹ نکلا

sabeenوزیراعلیٰ سندھ نے گزشتہ روز ایک پریس کانفرنس میں انکشاف کیا تھا کہ سانحہ صفورہ، سماجی کارکن سبین محمود کے قتل اور بوہری برادری پر حملوں میں ملوث ملزمان سعد عزیز، محمد اظفر عشرت اور حافظ ناصر ملک کے بڑے تعلیمی اداروں کے طلباءرہے  ہیں۔وزیراعلیٰ سندھ کے مطابق سعد عزیز نامی ملزم نے ملک کے معتبر تعلیمی ادارے آئی بی اے سے بی بی اے کر رکھا ہے اور اس نے قبول کیا ہے کہ وہ سبین محمود قتل کا ماسٹرمائنڈ ہے۔
قائم علی شاہ نے اپنی پریس کانفرنس کے دوران یہ نہیں بتایا کہ گرفتار ملزمان کس تنظیم سے تعلق رکھتے ہیں مگر سی آئی ڈی پولیس کے انچارج راجہ عمر خطاب کے مطابق یہ گروپ القاعدہ سے متاثر ہے۔عمر خطاب کے مطابق انہیں اس گروپ تک پہنچنے میں 13 ماہ کا عرصہ لگا اور یہ سب گرفتار افراد ایک ہی گروپ سے تعلق رکھتے ہیں۔
ان دہشت گردوں نے صفورا گوٹھ قتل عام سمیت ڈیفنس میں سبین محمود کے قتل، فیروزآباد کے علاقے میں امریکی ماہر تعلیم ڈیبرا لوبو پر فائرنگ، نیوی کے افسر پر بم حملہ اور رینجرز کے بریگیڈیر باسط پر خودکش حملہ، ناظم آباد اور نارتھ ناظم آباد میں اسکول پر گرینیڈ حملے اور پمفلٹس پھینکنے، آرام باغ، نارتھ ناظم آباد، بہادرآباد کراچی اور حیدرآباد میں بوہری برادری کی ٹارگٹڈ کلنگ اور بم حملے، ایم ے جناح روڈ، آرام باغ، گلستانِ جوہر، نیپا چورنگی، نارتھ ناظم آباد اور نارتھ کراچی میں پولیس کی گاڑیوں پربم حملے اور گلستان جوہر، نارتھ ناظم آباد، نارتھ کراچی، شاہ فیصل کالونی اور لانڈھی میں پولیس اہلکاروں کی ٹارگٹڈ کلنگ کا اعتراف کیا۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *