تھائی لینڈ کے اسپتال جائیں، سِکس پیکس بنواکرآئیں

بینگکاک: تھائی لینڈ می واقع ایک ہسپتال نے اعلان کیا ہے کہ وہ آپ کے بڑھتے ہوئے پیٹ کو کم کرکے پلاسٹک سرجری کے ذریعے اسے پیشہ ور تن ساز کی مانند سِکس پیکس ایبس میں تبدیل کردیں گے اور یہ کام صرف چند گھنٹوں میں ہوجائے گا۔

ورزش کے ذریعے پیٹ پر سِکس پیک ایبس بنانا بہت مشکل امر ہوتا ہے جس میں کئی ماہ کی مسلسل محنت اور صبر درکار ہوتا ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ ورزش کی بدولت کولہوں اور پیٹ کی چربی گھلانا ایک محال امر ہے اور پیٹ کی چربی کے نیچے موجود سِکس پیکس ایبس کو ظاہر کرنا چیلنج بن جاتا ہے۔

بینکاک میں قائم ماسٹر پیس اسپتال کا عملہ جراحی کی ایک قسم ’ایبڈومِنل ایچنگ‘ استعمال کرتا ہے۔ اس میں توند کی چربی غائب کرکے اندر پوشیدہ سِکس پیکس ایبس کو ظاہر کیا جاتا ہے۔ اسے چربی کی تلفی یعنی لائپوسکشن جیسا ہی سمجھنا چاہیے کیونکہ اس میں پلاسٹک اور سلیکون کے پیوند استعمال نہیں کئے جاتے۔

ماسٹرپیس اسپتال کے سی ای او روی وت سائی مشمودل نے بتایا کہ ہم جسم کی تبدیلی میں کسی قسم کے پیوند استعمال نہیں کرتے اور اسی وجہ سے گزشتہ چار سال سے ہمارا کام جاری ہے۔ اب بھی ہر ماہ 20 سے 30 افراد ہمارے پاس آرہے ہیں۔ دو سے چار گھنٹے میں پیٹ کی اضافی چربی کھنچ لی جاتی ہے اور سکس پیک نمایاں ہوجاتے ہیں۔

تن سازی کے ماہرین کہتے ہیں کہ ہر شخص محض ورزش سے پیٹ پر سِکس پیکس نہیں بناسکتا کیونکہ اس کے لیے خاص انداز میں وزن بھی کم کرنا ہوتا ہے۔ اسی بنا پر اب تھائی لینڈ کے فنکار اور ماڈل بھی ان سے رابطہ کررہے ہیں ان کے مطابق یہ ایک بے ضرر اور غیرتکلیف دہ عمل ہے۔

 

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *