یکم جولائی سے سیلز ٹیکس رجسٹریشن کیلئے خودکار نظام فعال ہوگا، ایف بی آر

فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) نے اعلان کیا ہے کہ یکم جولائی سے سیلز ٹیکس رجسٹریشن کے لیے خود کار نظام فعال ہوگا۔

ایف بی آر کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ سیلز ٹیکس ایکٹ 1990 کی شق 5 کی ذیلی شقیں 2 سے 8 تک کے تحت موجودہ نظام کو تبدیل کرنے کے لیے یہ طریقہ کار متعارف کروایا گیا ہے۔

طریقہ کار کے مطابق کوئی بھی درخواست گزار اپنے قومی ٹیکس نمبر (این ٹی این) یا انکم ٹیکس رجسٹریشن کے ساتھ آن لائن نظام کو لاگ ان کرسکے گا اور درج ذیل معلومات کے ساتھ ساتھ سیلز ٹیکس رجسٹریشن کے لیے دستاویزات بھی اپ لوڈ کرسکے گا:-

• بینک کی جانب سے کاروبار کے نام سے جاری کیا گیا بینک اکاؤنٹ سرٹیفیکیٹ

• گیس اور بجلی سپلائر کے ساتھ رجسٹریشن/صارف نمبر

• مختلف مقامات پر کئی شاخوں کی صورت میں تمام شاخوں کی تفصیلات

• کاروبار کے مقام کی جی پی ایس کے ساتھ منسلک تصاویر

• مینوفیکچرر ہونے کی صورت میں مشینوں اور صنعتوں میں لگائے گئے بجلی یا میٹر کی جی پی ایس چسپاں شدہ تصاویر

ایف بی آر کا کہنا ہے کہ مذکورہ بالا معلومات درج کرنے کے بعد یہ نظام درخواست گزار کو سیلز ٹیکس کے لیے رجسٹر کرے گا۔

رجسٹریشن کے بعد درخواست گزار یا مجاز شخص کو ایک ماہ کے اندر بائیو میٹرک تصدیق کے لیے نیشنل ڈیٹا بیس اینڈ رجسٹریشن اتھارٹی (نادرا) ای سہولت سینٹر جانا پڑے گا۔

درخواست گزار اگر نادرا نہ جاسکے یا بائیو میٹرک تصدیق کروانے میں ناکام ہوئے تو ان کا نام سیلز ٹیکس کے لیے متحرک ٹیکس گزار کی فہرست میں شامل کرلیا جائے گا۔

ایف بی آر نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ ایف بی آر کو مینوفیکچرر سے تصدیق کے بعد فیلڈ افسران یا ایف بی آر کی جانب سے مجازکسی تیسری پارٹی کے ذریعے بھی تصدیق کرسکتا ہے۔

مینوفیکچرر کی سیلزٹیکس رجسٹریشن طریقہ کار کے حوالے سے مزید کہا گیا ہے کہ فیلڈ افسران کو رجسٹریشن کے بعد چھان بین کے دوران پتہ چلتا ہے کہ فراہم کی گئیں دستاویزات اصلی نہیں ہیں یا جعلی یا غلط ہیں تو وہ نظام کے ذریعے 15 روز میں مطلوبہ دستاویزات فراہ کرنے کی درخواست کرسکتا ہے۔

اگر مینوفیکچرر 15 روز میں دستاویزات فراہم کرنے میں ناکام ہوتے ہیں تو رجسٹرڈ شخص کو سیلز ٹیکس کی فعال ٹیکس کنندگان کی فہرست سے خارج کردیا جائے گا۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *