اسٹیٹ بینک نے 40ہزار روپے کے پرائز بانڈز بند کردیے

کراچی: اسٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی) نے تمام کمرشل بینکوں کو 40 ہزار روپے والے پرائز بانڈز کی فروخت روکنےکی ہدایت کردی۔

بینکوں کو جاری ایک اعلامیے میں اسٹیٹ بینک نے کہا کہ ’ 40 ہزار روپے مالیات کے قومی پرائز بانڈ 24 جون کے بعد نہیں فروخت کیے جائیں گے اور 31 مارچ 2020 کے بعد کیش میں تبدیل نہیں ہوں گے‘۔

واضح رہے کہ ان پرائز بانڈز کو خریدنے کے لیے مبینہ طور پر بڑی تعداد میں کالا دھن استعمال ہونے کے بعد حکومت نے ان کی فروخت منجمد کرنے کا فیصلہ کیا تھا کیونکہ ان بانڈز کے ذریعے لاکھوں مالیت کے انعام کی بھی پیش کش کی جاتی تھی۔

تاہم یہ پرائز بانڈ رکھنے والوں کو یہ اختیار دیا گیا تھا کہ وہ انہیں اسپیشل سیونگز سرٹیفکیٹس (ایس ایس سی) یا ڈیفنس سیونگ سرٹیفکیٹس (ڈی ایس سی)، اسٹیٹ بینک کے مجاز دفاتر یا نیشنل بینک آف پاکستان، حبیب بینک، یونائیٹڈ بینک، الائڈ بینک اور بینک الفلاح لمیٹڈ کے ذریعے پریمیم پرائز بانڈ یا نقد رقم سے تبدیل کرواسکتے ہیں۔

اسٹیٹ بینک کا کہنا تھا کہ ’بانڈز کی تبدیلی کی رقم نقد ادائیگی کی صورت میں نہیں کی جائے گی بلکہ یہ کیش بانڈ رکھنے والے کے بینک اکاؤنٹ میں منتقل کی جائے گی‘۔

بانڈ رکھنے والوں کو اس تبادلے کیلئے اپنے نام سے ایک تحریری درخواست جمع کروانی ہوگی اور رجسٹریشن یا پریمیم پرائز بانڈز کی خریداری کے لیے ایک مقررکردہ درخواست فارم جمع کروانا ہوگا۔

اسی طرح تقریباً یہی طریقہ کار 40 ہزار والے پرائز بانڈز کو ایس ایس سی اور ڈی ایس سی سے تبدیل کروانے کے لیے ضروری ہوگا۔

اسٹیٹ بینک کی جانب سے کہا گیا کہ 40 ہزارمالیت کے پرائز بانڈز کی مزید قرعہ اندازی نہیں ہوگی کیونکہ اس کی آخری قرعہ اندازی 3 جون کو ہوئی تھی

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *