شام کے کیمیائی ہتھیاروں کی تلفی، امریکہ اور روس متفق

0c68404acb42321e3d0f6a7067004b53روس اور امریکہ کے درمیاں شام کے کیمیائی ہتھیاروں کو تلف کرنے پر اتفاق رائے ہو گیا ہے۔ اس بات کا اعلان امریکی سیکریٹری خارجہ جان کیری اپنے روسی ہم منصب کے ساتھ دو طرفہ معاہدے پر دستخظ کرنے کے بعد ایک پریس کانفرنس میں کیا۔ معاہدے کی رو سے ایک ہفتے کے دوران شام اپنے کیمیائی ہتھیاروں کی فہرست مہیا کرے گا۔ معاہدے میں شامی ہتھیاروں کے ذخائر محدود کرنے پر بھی اتفاق ہو گیا ہے۔
پریس کانفرنس کے دوران ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے جان کیری نے کہا کہ اگر اس پلان پر عمل کیا گیا تو دنیا ایک حد تک کیمیائی ہتھیاروں کے خطرے سے محفوظ رہے گی۔ اور اگر شامی صدر بشار الاسد اس معاہدے پر عمل کرنے سے پس و پیش سے کام لیا تو یہ معاملہ اقوام متحدہ کےسکیورٹی کونسل کے سامنے پیش کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ بین القوامی قانون کی خلاف ورزی کی صورت میں اقوام متحدہ کے چارٹر کے مطابق طاقت کا استعمال کیا جائے گا۔
اس موقع پر روسی وزیر خارجہ نے کہا کہ اس معاہدے پر دستخط کرنے کے باوجود ہم شام کے خلاف طاقت کے استعمال کی مخالفت کریں گے۔ انہوں نےکہا کہ اس معاہدے کے بارے میں شامی حکومت کی رائے ابھی نہیں لی گئی، ان سے مذاکرات ہونا ابھی باقی ہے۔ یاد رہے کہ روس اب تک پرزور طور پر شامی حکومت کی حمایت کر رہا ہے اور وہ شام کے خلاف  سکیورٹی کونسل کے قرار داد بھی ویٹو کر چکا ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *