کرپشن اسکینڈل: فیفا کے صدر سیپ بلاٹر مستعفی

seppblatterزیورخ: فٹبال کی عالمی تنظیم فیفا کے صدر سیپ بلاٹر نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دیدیا ہے۔ برطانوی وزیرِاعظم ڈیوڈ کیمرون اور یورپی فٹبال تنظیم یوئیفا کے صدر میشل پلاٹینی نے سیپ بلاٹر سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کیا تھا۔ سیپ بلاٹر کی جانب سے جاری ہونے والے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ میرے نزدیک فیفا اور فٹبال سب سے اہم ہیں۔ موجودہ صورتحال میں فیفا کی صدارت جاری نہیں رکھ سکتا۔ خیال رہے کہ کرپشن کے الزامات میں پھنسی فٹبال کی عالمی تنظیم فیفا نے چند روز قبل ہی سیپ بلاٹر کو پانچویں بار صدر منتخب کیا تھا۔ یہ انتخاب ایک ایسے موقع پر ہوا جب زیورخ سے ہی فیفا کے دو نائب صدور سمیت سات عہدیداروں کو امریکا میں جاری فراڈ اور بدعنوانی کی تحقیقات کے سلسلے میں حراست میں لیا گیا تھا۔ امریکی حکام نے اب تک اس سلسلے میں 14 افراد پر منی لانڈرنگ، دھوکا دہی اور کمیشن لینے کے الزامات کے تحت فردِ جرم عائد کی ہے۔ عہدہ سنبھالنے کے بعد ان کا کہنا تھا کہ فٹبال اور فیفا کی ساکھ کو خراب کرنے کی اجازت نہیں دی جا سکتی۔ ان کا کہنا تھا کہ انھیں فٹبال میں ہونے والی کرپشن کا ذمہ دار قرار دیا جا رہا ہے لیکن وہ ہر کسی کی نگرانی نہیں کر سکتے۔ انھوں نے تسلیم کیا کہ آئندہ مہینے آسان نہیں ہوں گے اور مزید بُری خبریں آئیں گی۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *