تعلیم ہماری اعلیٰ ترین ترجیح ہے:نوازشریف

nawza 3وزیراعظم نواز شریف نے منگل کے روز کہا کہ متعدد چیلنجز کے باوجود تعلیم پاکستان کی اعلیٰ ترین ترجیحات میں شامل ہے اور حکومت اس شعبے میں 2018 تک جی ڈی پی کا 4 فیصد خرچ کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔اوسلو میں ’ترقی کے لیے تعلیم‘ پر ایک سمٹ کے دوران گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ گزشتہ ایک دہائی کے دوران پاکستان کو کئی معاشی مسائل کا سامنا رہا ہے جن میں زلزلے، سیلاب، دہشت گردی اور لوگوں کی نقل مکانی شامل ہے۔وزیراعظم نے کہا کہ 2005 کے زلزلے کے باعث ہزاروں اسکول جبکہ سیلاب کی وجہ سے تقریباً 9088 اسکول تباہ ہوئے جبکہ 5790 اسکولوں کی عمارتوں کو متاثرہ افراد کی پناہ گاہوں کے طور پر استعمال کیا گیا۔نواز شریف نے کہا کہ پاکستان پہلے ہی اسکولوں کی تعمیر کے لیے کروڑوں روپے خرچ کرچکا ہے تاہم متاثرہ افراد کی بحالی کے لیے کئی ارب روپوں کی مزید ضرورت ہے۔دہشت گردی پر بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ تنازعات میں پھنس جانے والے افراد کے لیے تعلیم تک رسائی رکنی نہیں چاہیے جبکہ پاکستان نے قبائلی علاقوں میں دہشت گردی کے خلاف جنگ کے دوران بھی عارضی طور پر بے گھر ہونے والے افراد کے لیے تعلیم فراہم کرنے کا سلسلہ جاری رکھا۔وزیراعظم نے کہا کہ تعلیم پاکستان میں اب صوبائی معاملہ ہے، اس کے باوجود وفاقی حکومت تعلیم کے ملک بھر میں فروغ میں اپنا کردار ادا کررہی ہے۔ اے پی پی۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *