برقی آلات کا استعمال سرطان کا باعث بن سکتا ہے

file photo1امریکا کی یونیورسٹی  آف نیومیکسکو کی خاتون سائنسداں میر لوگ اور ان کے ساتھیوں نے سروے کیا ہے۔ جس سے معلوم ہوا ہے کہ سورج سے نکلنے والی الٹراوائلٹ شعاعیں انسانوں میں جلد کےسرطان کی وجہ بنتی ہیں جبکہ ان آلات کی اسکرین سے ہی مضر شعاعیں منعکس ہوکر انسانوں پر پڑ کر بالواسطہ طور پر انہیں سرطان کا شکار کرسکتے ہیں۔ اس چھوٹے لیکن اہم مطالعے میں لوگوں کو کھلی فضا میں لے جایا گیا اور ان کے سر پر الٹراوئلٹ روشنی کی شدت ناپنے کا آلہ لگایا اور انہیں موبائل فون اور دیگر آلات استعمال کرنے کو کہا گیا۔

صبح سے دوپہر تک مختلف لوگوں کو ایک رسالہ، ایک آئی فون ، ایک کنڈل ای ریڈر اور دو میک بک لیپ ٹاپ استعمال کرنے کو دیئے گئے ۔ پہلے انہوں نے تمام آلات اپنے سر پر لگے آلات سے 16 انچ کی دوری پر رہتے ہوئے استعمال کیے اور پھر 12 انچ کے فاصلے سے استعمال کیے جن میں کھلے ہوئے رسالے نے 46 فیصد، آئی پیڈ  نے 85 فیصد اور 11 انچ کی میک بک نے 75 فیصد الٹراوائلٹ شعاعیں منعکس کرکے چہرے اور گردن پر منعکس کیں۔ جلد کے ماہرین کے مطابق آئی پیڈ اور میک بک سے پلٹ کر آنے والی دھوپ اگر بہت طویل عرصے تک چہرے پر پڑے تو اس سے جلد کے سرطان کا خطرہ ہوسکتا ہے۔ ماہرین نے اس کے بعد خبردار کیا ہے کہ موبائل اور ٹیبلٹ وغیرہ کا بہت دھوپ میں استعمال نہ کیا جائے اور اس مطالعے سے جلدی سرطان کے خطرے کی تصدیق ہوتی ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *