جسے اللہ رکھے اُسے کون چکھے

اِس مقولے کی عملی تصویر راجھستان میں تب دیکھنے میں آئی جب ہمر سنگھ راجپوت نامی نوجوان ایک سنگین ایکسیڈنٹ میں معجزاتی طور پر زندہ بچ گیا۔ ہمر مو ٹر سائیکل پر تیز رفتاری میں جا رہا تھا کہ اپنے آگے جانے والی گاڑی سے ٹکرا گیا جس میں موجود دو سریے اُس کی گردن کے آر پار ہو گئے۔ عینی شاہدین کا کہنا تھا کہ راجپوت خون میں بھیگا مدد کے لئے پکار رہا تھا۔ جب اُس کو ہسپتال لے جایا گیmiracle picا تو ڈاکٹر بھی اُس کو ذندہ دیکھ کر حیران رہ گئے۔ ہمر کا آپریشن کرنے والے ڈاکٹر منیش چھپروال کا کہنا تھا ’’ یہ ایک معجزہ ہے، ضرب اتنی شدید تھی کہ سریا گردن میں لگ کر کمر سے نکل گیا۔ اُس کے بچنے کی اُمید کم تھی لیکن صد شکر کے کوئی اہم نَس نہیں کٹی‘‘۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *