مودی کو پارٹی کی اندرونی بغاوت کا سامنا

بھارتی وزیرِاعظم نریندر مودی کو بِہار الیکشن میں شرمناک شکست کے بعد اب پارٹی کے سینیئر عہدیداروں کی بغاوت کا سامنا ہے۔سابق ڈپٹی وزیراعظم ایل کے ایڈوانی، پارٹی کے سابق صدر مرلی منوہر جوشی اور سابق وزیرِ خزانہ یشونت سنہا نے بیان دیا ’’ کہ پارٹی کی الیکشن میں شرمناک شکست کی مکمل چھان بین ہونی چائیے۔ اسوقت پارٹی کے عہدیداروں کو طاقت کے سامنے گھٹنے ٹیکنے کو کہا جا رہا ہے‘‘۔ پہلے دہلی اور پھر بِہار کے الیکشن میں پارٹی کی ہار مودی کی شہرت میں مسلسل کمی کی طرف اشارہ کر رہی ہے۔ایل کے ایڈوانی کا کہنا تھا کہ ’’ مودی نے پچھلے ایک سال میں پارٹی adwaniکو ہیجڑا بنا دیا ہے۔‘‘ اُنہوں نے مزید کہا کہ ’’ الیکشن کی ہار کے لئے سب کو قصور وار ٹھہرانا ایسا ہی ہے جیسے آپ کسی کو بھی قصور وار نہیں ٹھہرا رہے‘‘۔ یہ تمام عناصر مودی کے دورہِ برطانیہ پر برا اثر ڈال سکتے ہیں۔ مودی کو پہلے سے ہی برطانیہ میں بھی مختلف مکاتبِ فکر کی مخالفت کا سامنا ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *