ویتنام کے ریستوران میں چوہے کی سیخیں

mousویتنام میں یہ چوہوں کے شکار کا موسم ہے جس کا مطلب ہے کہ ویتنام کے دارالحکومت ہنوئی کے نواح دان فونگ میں ایک ریستوران کے مینیومیں سیخوں پر لگے چوہے پیش کئے جا رہے ہیں۔
چوہے کا گوشت اس جنوبی ایشیائی ملک کے جنوبی علاقوں میں کئی سالوں تک ایک نفیس غذا سمجھا جاتا رہا ہے، اور اب اس کو کھانے کا ذوق پھیلتا جا رہاہے ۔
پہلے یہ صرف شمالی ریڈ رور کے ڈیلٹا اور جنوبی میکنگ رور کے ڈیلٹا کے لوگ باقاعدگی سے کھاتے تھے مگر اب چوہے کا گوشت کھانے والوں کا حلقہ بہت وسیع ہوتا جارہاہے۔
سال کی اس مدت میں، جب چاول کاٹے جا تے ہیں، جنوبی علاقوں میں موجود کسان ، چوہوں کے شکار میں محو ہو جاتے ہیں تاکہ ان ننھے جانوروں کوبازار میں فروخت کے لئے پکڑ سکیں۔
جنوبی میکونگ کے ڈیلٹا میں ، شکار بالخصوص سیلاب کے موسم میں نفع بخش ہوتا ہے، جب چوہے اپنے سیلابی بلوں سے نکلنے کی کوشش کرتے ہیں۔ چوہے کے ایک کلو گوشت کی قیمت تقریباً ایک لاکھ ڈونگ یا 4سے 5ڈالر ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *