مقناطیسی سیاہی کے استعمال پر الیکشن کمیشن نے وزیر داخلہ کا بیان مسترد کر دیا

ECPالیکشن کمیشن کے سیکریٹری اشتیاق احمد خان کا کہنا ہے کہ عام انتخابات میں نادرا کے معیار کے مطابق مقناطیسی سیاہی استعمال کی گئی تھی اور مقناطیسی سیاہی کے ساڑھے چار لاکھ پیڈز استعمال کیے گئے۔

دوسری جانب الیکشن کمیشن نے خیبر پختونخوا میں بائیو میٹرک سسٹم کے استعمال سے متعلق بریفنگ مانگ لی۔

الیکشن کمیشن نے کہا ہے کہ عام انتخابات میں مقناطیسی سیاہی استعمال کی گئی تھی، ریٹرننگ افسران تک مقناطیسی سیاہی پہنچانے کا ریکارڈ موجود ہے۔ یادر رہے کہ وزیرداخلہ چوہدری نثار علی خان نے اپنے بیان میں یہ دعویٰ کیا تھا کہ عام انتخابات میں مقناطیسی سیاہی استعمال ہی نہیں ہوئی۔

ذرائع نے بتایا ہے کہ الیکشن کمیشن نےخیبرپختونخوا میں بائیومیٹرک سسٹم کے استعمال سے متعلق بریفنگ مانگ لی ہے۔ خیبرپختونخوا حکومت نے بلدیاتی انتخابات میں الیکٹرونک ووٹنگ مشین کے استعمال کے لیے الیکشن کمیشن کو خط لکھا تھا، الیکشن کمیشن نے چئیرمین نادرا کو آج بریفنگ کے لیے بلا لیا ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *