بنگلہ دیش: عبدالقادر ملا کی پھانسی پر قرارداد،پاکستانی ہائی کمشنر طلب

 mullaگزشتہ روز قومی اسمبلی کی جانب سے جماعت اسلامی کے رہنما عبدالقادر ملا کی پھانسی پر مذمتی قرارداد منظور کرنے پر بنگلہ دیش کی حکومت نے پاکستانی ہائی کمشنر کوطلب کرلیا۔
بنگلہ دیش کی وزارت خارجہ کا ایک اعلامیے میں کہنا تھا کہ ملا کی پھانسی بنگلہ دیش کا اندورنی معاملہ ہے اور پاکستان کی قومی اسمبلی کی جانب سے قرارداد منظور کرنا بلاجواز ہے۔اس حوالے سے ڈھاکہ کے لیے پاکستانی ہائی کمشنر میاں افراسیاب مہدی ہاشمی کو طلب کیا گیا۔بنگلہ دیش نے گزشتہ ہفتے جماعت اسلامی کے سینئر رہنما اور اپوزیشن لیڈر عبدالقادر ملا کو پھانسی دے دی تھی۔ملا پر 1971 میں بنگلہ دیش کی آزادی کی تحریک کے دوران جنگی جرائم میں ملوث ہونے کا الزام تھا۔
گزشتہ روز پاکستانی کی قومی اسمبلی نے جماعت اسلامی کے رہنما عبدالقادر ملا کو 1971ء میں پاکستان کی حمایت کرنے پر پھانسی کی سزا دیئے جانے پر سخت تشویش کا اظہار کرتے ہوئے مذمتی قرارداد کثرت رائے سے منظور کی۔قرارداد میں بنگلہ دیشی حکومت سے مطالبہ کیا گیا کہ وہ جماعت اسلامی کے تمام رہنماؤں پر مقدمات افہام و تفہیم کے جذبے کے تحت ختم کردے۔
دوسری جانب ملا کی پھانسی پر پاکستانی وزیر داخلہ چوہدری نثار کا اس موقع پر کہنا تھا کہ ایسی شخصیت جس نے ہمیشہ پاکستان کے ساتھ وفاداری کی انہیں پھانسی پر لٹکا دیا گیا۔ان کا مزید کہنا تھا کہ ہم بنگلہ دیش کی آزادی اور خود مختاری کا احترام کرتے ہیں تاہم ملا کی پھانسی قابل مذمت ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *