ڈینگی سے بچاﺅ کے لیے ویکسین تیار

dengi غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق فرانسیسی فارموسیوٹیکل کمپنی سنوفی کا کہنا ہے کہ انھوں نے ڈینگوڑیا نامی ویکسین 20 برسوں میں تیار کی جس پر 16 ارب ڈالرز سے زائد رقم خرچ ہوئی ہے۔ ویکسین نو سال سے زیادہ عمر کے بچوں اور 49 سال سے کم عمر افراد کو ان علاقوں میں دستیاب ہوگی جہاں یہ مرض وبائی صورت میں موجود ہوگا۔ ویکسین تیار کرنے والی کمپنی سنوفی کا کہنا ہے کہ یہ چار قسم کے ڈینگی وائرس سے بچاو¿ کے لیے تیار کی گئی ہے۔
واضح رہے کہ ڈینگی بخار ہر سال دنیا بھر میں 40 کروڑ افراد کو متاثر کرتا ہے۔ لاطینی امریکا اور ایشیائی ممالک کے افراد سب سے زیادہ اس مرض سے متاثر ہوتے ہیں۔ ڈینگی بخار کا شکار ہونے والوں میں ایک بڑی تعداد بچوں کی ہوتی ہے۔ عالمی ادارہ صحت کے مطابق مچھر سے پھیلنے والی اس بیماری سے ہر سال 22 ہزار افراد موت کے منہ میں چلے جاتے ہیں۔ یہ ایک انسان سے دوسرے انسان میں ایک خاص قسم کے مچھر کے ذریعے منتقل ہوتا ہے جو شدید بخار اور دیگر قسم کی بیماریاں پھیلانے کا سبب بھی ہے۔ ڈینگی بخار پہلی بار 1950ءکی دہائی میں تھائی لینڈ اور فلپائن میں منظر عام پر آیا تھا۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *