کرم ایجنسی : بازار میں دھماکے سے ہلاکتوں کی تعداد 20 ہو گئی

karam agency پاک افغان سرحد پر واقع قبائلی علاقے کرم ایجنسی میں بازار میں دھماکے سے 20افراد ہلاک جبکہ 55زخمی ہوئے۔ایک نجی ٹی وی چینل کے مطابق کرم ایجنسی کے علاقے پارا چنار کے عید گاہ لنڈا بازار میں ہونے والے دھماکا میں زخمی ہونے والے 20 افراد کی حالت تشویشناک بتائی جا رہی ہے۔پولیٹیکل حکام کے مطابق ہلاک شدگان اور زخمیوں کو ایجنسی ہیڈ کوارٹر اسپتال منتقل کیا گیا.بازار میں موجود افراد زخمیوں کو ذاتی اور نجی گاڑیوں میں اسپتال منتقل کرتے رہے۔تعطیل کے باعث بازار میں عمومی دنوں سے زیادہ لوگ تھے جس کے باعث حکام نے ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ بھی ظاہر کیا گیا جبکہ فوری طور پر دھماکے کی نوعیت معلوم نہ ہوسکی۔
پولیس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں نے جائے وقوع پر پہنچ کر علاقے کو گھیرے میں لے لیا اور واقعے کی تفتیش شروع کردی۔بتایاگیا ہے کہ دھماکے کے مقام سے 2 مشتبہ افراد کو حراست میں بھی لیا گیا جن کو مزید تفتیش کے لیے نامعلوم مقام پر منتقل کر دیا گیا۔
بیرون ملک دورے پر ترکمانستان میں موجود وزیر اعظم نواز شریف نے پارا چنار دھماکے کی شدید مذمت کی، انہوں نے دھماکے میں ہلاک ہونے والے افراد کے اہل خانہ سے اظہار تعزیت کیا جبکہ زخمیوں کو بہتر طبی سہولیات فراہم کرنے کی ہدایت کی۔نواز شریف نے بیان میں کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ سے پیچھے ہٹنے کی گنجائش نہیں ہے۔وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے دھماکے کی مذمت کرتے ہوئے متعلقہ اداروں سے اس کی رپورٹ طلب کی۔
پشاور میں اسلامیہ کالج میں تقریب سے خطاب میں تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے دھماکے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ پوری قوم دہشت گردی کے خاتمے کے لیے متحد ہو چکی ہے.
علاوہ ازیں پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری، وزیر اعلی پنجاب میاں شہباز شریف، اسپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق اور دیگر رہنماو¿ں نے بھی دھماکے کی شدید مذمت کی۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *