گزری پولیس مقابلے کے ملزم کا 14 روزہ ریمانڈ

gazri muqablaمقامی عدالت نے گزری میں مبینہ پولیس مقابلے میں زخمی ہونے والے ملزم غلام آزاد کو 14 جنوری تک عدالتی ریمانڈ پر جیل بھیج دیا۔پولیس نے گزری میں مبینہ مقابلے کے زخمی ملزم غلام آزاد کو ڈکیتی کے مقدمے میں جوڈیشل مجسٹریٹ (جنوب) نور محمد کلمتی کی عدالت میں پیش کیا۔پولیس نے عدالت سے ملزم کے 14 روز کے جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی، تاہم عدالت نے ملزم کو کوڈ آف کریمنل پروسیجر (سی آر سی پی) کے سیکشن 173 کے تحت 14 جنوری تک عدالتی ریمانڈ پر جیل بھیجنے کا حکم دیتے ہوئے انویسٹی گیشن آفیسر کو اگلی سماعت میں رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیا۔
واضح رہے کہ تین روز قبل گزری میں مبینہ پولیس مقابلے میں لیاری کا رہائشی نوجوان ذکریا گولی لگنے سے ہلاک ہوگیا تھا جبکہ غلام آزاد کو گرفتار حالت میں گرفتار کیا گیا تھا۔پولیس نے ذکریا اور غلام آزاد کے خلاف اقدام قتل، غیر قانونی ہتھیار رکھنے اور ڈکیتی سمیت چار مقدمات درج کیے تھے۔تاہم ذکریا کا اہل خانہ کا کہنا ہے کہ وہ کسی طرح کی ڈکیتی میں ملوث نہیں تھا اور اسے جعلی پولیس مقابلے میں مارا گیا۔
گزشتہ روز ڈیوٹی مجسٹریٹ نے زخمی ملزم کو ایک دن کے ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا تھا۔کیس کے انویسٹی گیشن آفیسر چوہدری امانت کا کہنا ہے کہ ڈکیتی کے مقدمے میں زخمی ملزم نے پولیس کو دیئے گئے اپنے بیان میں ذکریا کے ساتھ موبائل اور نقدی چھیننے کا اعتراف کیا۔پولیس رپورٹ کے مطابق زخمی غلام آزاد سے نائن ایم ایم پستول، چھینے گئے موبائل فونز اور کچھ اور سامان برآمد ہوا، جبکہ ذکریا کے قبضے سے نائن ایم ایم پستول، 4 موبائل فونز اور 200 روپے برآمد ہوئے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *