ڈونلڈ ٹرمپ، جن مسلمانوں کو میں جانتی ہوں آپ اُن سے نہیں ملے

ڈونلڈ ٹرمپ صاحب میں عربی کا حوtrump 1الہ رکھنے والی ایک امریکن عیسائی ہوں اور آج میں آپ کو اُن مسلمانوں کے بارے میں بتاؤں گی جو آپ کی بنائی گئی بھیانک تصویر سے بالکل مختلف ہیں۔ میں ایک عیسائی ہوں تو آپ کا اندازہ لگا سکتے ہونگے کہ کرسمس ہمارا ایک اہم تہوار ہے۔ میرے گھر کرسمس پر میرے مسلمان دوست اتنے تحائف اور کھانے پینے کی چیزیں لاتے ہیں کہ وہ میرے اور میرے 9بچوں کے خاندان کے لیے کافی ہوتی ہیں۔ کبھی کسی مسلمان دوکاندار نے کم پیسے دینے پر بھی میرا خریدا ہوا سامان واپس نہیں کیا۔ میرے مانگنے پر مجھے اُن سے ہر طرح کی مدد ملی چاہے وہ گاڑی میں دی جانے والی لفٹ ہی کیوں نا ہو۔ حتیٰ کہ اپنی خود کی پہنی چیزیں بھی مسلمانوں نے مجھے اُتار کردے دیں،کیا میں نے آپ کو بتایا کہ مجھے یہ سب کتنا اچھا لگتا ہے۔ جن مسلمانوں کو میں جانتی ہوں وہ اپنی جان، اپنے مال ور اپنے وقت سے مشکل میں گھرے عیسائیوں کی مدد کرتے ہیں۔میری جان پہچان کے مسلمان صرف مجھے بہن کہتے نہیں ہیں بلکہ سمجھتے بھی ہیں۔کبھی پتہ پوچھنے پراُنہوں نے مجھے پتہ نہیں سمجھایا بلکہ ہمیشہ یہ کہا کہ ہمارے ساتھ چلیں ہم آپ کوچھوڑآتے ہیں۔ ٹرمپ صاحب میری گزارش ہے کہ ایک ہی عینک لگا کے سارے مسلمانوں کو مت دیکھیں اور کچھ گنتی کے برے انسانوں کی وجہ سے آپ ایک کھرب لوگوں کو غلط قرار نہیں دے سکتے۔اُن مسلمانوں کے بارے میں سوچیں جن سے خود بھی مشرقِ وسطیٰ میں اپنے بزنس کی غرض سے ملے ہیں۔ مسلمانوں کو انفرادی طور پر دیکھنے اور سمجھنے کی کوشش کریں اور اُن کے نیک اعمال کی عزت بھی کریں۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *