ایک انتقال کر جانے والا شوہر

husbanرابرٹ کلمنٹس

شوہر جو ابھی ابھی فوت ہوا تھا، موتیوں سے آراستہ دروازے کی طرف بڑھا، لیکن ایک خوبصورت فرشتے نے اسے روک دیا، ’’اس جانب نہیں جناب!‘‘
’’لیکن اس پر درج ہے کہ یہ ’جنت کا دروازہ‘ ہے؟‘‘
’’ہاں، مگر صرف ان کے لئے جو اس میں داخل ہونے کا حق حاصل کر چکے ہیں۔‘‘
’’میں یہ حق حاصل کر چکا ہوں!‘‘
’’میرا نہیں خیال جناب، کیا آپ مہربانی فرما کر دوسری جانب، دوزخ کے دروازے کی طرف مڑیں گے!‘‘
’’کیا! تم اپنے آپ کو سمجھتی کیا ہو؟‘‘
’’خدا کی ایک فرشتہ!‘‘
’’ایک عورت!‘‘
’’پھر؟‘‘
’’چُپ ہو جاؤ!‘‘
’’کیا؟‘‘
’’میں نے کہا چُپ ہوجاؤ!‘‘
’’اور مجھے کیوں نہیں بولناچاہئے جناب؟‘‘
’’کیونکہ تم ایک عورت ہو، حتیٰ کہ اب اگر تم ایک فرشتہ ہوتو بھی عورتیں اس طرح مردوں سے بات نہیں کرتیں!‘‘
’’جناب یہی وجہ ہے کہ آپ کو اس جانب موڑا جارہا ہے، زمین میں بھیجے جارہے ہیں، آپ نے عورتوں کے ساتھ کتوں سے بدتر سلوک کیا۔ آپ نے انہیں پالتو جانوروں کی طرح رکھا! آپ کی بیوی۔۔۔‘‘
’’کیا وہ شکایت کرتی رہی ہے؟‘‘
’’شکایت نہیں کرتی رہی، بلکہ ہر روز دعا کرتی رہی ہے کہ آپ اپنے طریقے بدل لیں لیکن اپنے ہاتھ میں بائبل لئے، آپ نے اسے بتایا کہ آپ اس کے مالک ہیں، اور جب آپ نے محسوس کیا کہ وہ آپ کی بات کی قائل نہیں ہوتی توآپ نے حتیٰ کہ بائبل کو استعمال کیا۔۔۔‘‘
’’ہاں میں نے ایسا کیا۔۔‘‘
’’اسے اس کے ساتھ مارا!آپ کی وہ بھاری بائبل اس مقصد کی نسبت کے جس کے لئے یہ ہے، ایسے کاموں کے لئے زیادہ استعمال ہوتی!آپ کواس کے ساتھ اسے مارنا یاد ہے، کیا آپ کو نہیں یاد جناب؟‘‘
’’وہ میری حکم عدولی کیا کرتی۔جب میں تبلیغ کرتا تومیں اس کو بتایا کرتا کہ روزہ رکھے اور نماز پڑھے اور بعض اوقات جب میں غیر متوقع طور پر اسے حیران کرنے کے لئے جلدی گھر آجاتا تو میں اسے سویا ہوا پاتا!‘‘
’’بیچاری، تھکی ہوئی عورت، جب وہ تمہیں تبلیغ کرتی تو تم کیوں روزہ نہ رکھتے اور کیوں نماز نہ پڑھتے؟ جو زندگی اس نے گزاری ہے، شاید وہ اس کے دوران تمہارے بولے ہوئے لفظوں سے بھی زیادہ ثواب کما چکی ہو! کیا یسوح نے اپنے پیروکاروں کو گیتھس مین کے باغ میں سویا ہوا پانے پر مارا تھا؟‘‘
’’وہ آدمی تھے!‘‘
’’اہا، ہاں۔ یہ تو میں بھول گئی تھی، لیکن تمہیں جنت میں نہ جانے دینے کی سب سے بڑی وجہ یہ ہے کہ تم شاید جنت میں رہنے میں بہت دقت محسوس کرو ، کیونکہ یہاں مرد اور عورتیں برابر ہیں!‘‘
’’میں اس صورتِ حال میں گزارا کرنے کے لئے خود کو تیار کر سکتا ہوں!‘‘
’’بہت دیر ہو گئی ہے جناب! بہت دیر! بالکل اتنی دیر ، جتنی یسوح کو زمین پر موجود مردوں کے ساتھ گھلنے ملنے میں لگی تھی، وہ عورتوں کے ساتھ گھل مل گئے، سماریہ کی عورت مریم، جنہوں نے ان کے پیروں پر تیل ڈالا اور کئی دوسری عورتوں کے ساتھ بھی، سب برابر ہیں!‘‘
اور جنت کے دروازے سے ایک عورت کی آواز آئی، ’’یہ میرا شوہر ہے، اسے اندر آنے دو!‘‘
’’یہ تمہاری بیوی ہے!‘‘ خوبصورت فرشتہ بولی، ’’حتیٰ کہ ابھی بھی وہ تم سے محبت کرتی ہے! لیکن وہ اس آدمی کے ساتھ اپنی ابدی زندگی گزارنے سے زیادہ کی مستحق ہے جو یہ سمجھا کرتا تھا کہ وہ اس کی کنیز ہے۔ افسوس، تمہارا دوست شیطان آگیا ہے، تمہیں وہاں لے جانے کے لئے جہاں تمہاری بیوی ان احساس برتری میں مبتلا ظالم مردوں کو مار رہی ہے ۔۔۔ جو دوزخ سے تعلق رکھتے ہیں۔۔!‘‘

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *