تائیوان: ملبے سے مزید دو زندہ برآمد، ہلاکتوں کی تعداد 34 ہوگئی

تائیوان کے شہر تائینانearthquake in taiwan میں دو روز قبل آنے والے زلزلے سے منہدم ہونے والی کثیر المنزلہ رہائشی عمارت کے ملبے سے مزید دو افراد کو زندہ نکال لیا گیا ہے۔ادھر حکام نے اس سلسلے میں تحقیقات شروع کر دی ہیں کہ آیا منہدم ہونے والی عمارت کی تعمیر ناقص تو نہیں تھی جو وہ زلزلے کے جھٹکے نہ سہار سکی۔ہفتے کی صبح  آنے والے اس زلزلے کی شدت ریکٹر سکیل پر 6.4 تھیاور اس سے اب تک 34 افراد کی ہلاکت کی تصدیق ہو چکی ہے جبکہ زخمیوں کی تعداد 500 کے لگ بھگ ہے۔نکالے جانے والے افراد میں ایک مرد اور ایک خاتون شامل ہیں تاہم عمارت کے ملبے تلے اب بھی 100 سے زیادہ افراد کے دبے ہونے کا خدشہ ظاہر کیا گیا ہے۔تائیوان سے رکن پارلیمان وانگ تنگ یو نے خبر رساں ادارے روئٹرز کو بتایا ہے کہ ساؤ وی لنگ نامی خاتون کو جب پیر کی صبح نکالا گیا تو ہوش میں تھیں اور انھیں ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔امدادی اہلکاروں کا کہنا ہے کہ یہ عورت اپنے اپارٹمنٹ میں اپنے خاوند کی لاش کے نیچے دبی ہوئی تھی جبکہ ان کے دو سالہ بیٹے کی لاش بھی قریب ہی موجود تھی۔

ہلاک ہونے والے بیشتر افراد اسی 17 منزلہ رہائشی عمارت میں موجود تھے جو زلزلے کے نتیجے میں گر گئی۔اتوار کی شب تک عمارت کے ملبے سے 310 افراد کو نکالا جا چکا ہے جن میں سے 100 کو ہسپتال میں داخل کیا گیا ہے۔امدادی کارروائیوں میں سینکڑوں فوجی اہلکار شامل ہیں اور انھیں جدید آلات اور سونگھنے والے کتوں کی مدد حاصل ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *