ڈاکٹر عاصم نیب کی تحویل سے اب جیل میں

news

کراچی: احتساب عدالت نے نیب کے جسمانی ریمانڈ میں توسیع کے لئے تفتیشی افسر کی درخواست مسترد کرتے ہوئے ڈاکٹر عاصم کو 12 روزہ جوڈیشنل ریمانڈ پر جیل بھجوادیا ہے۔تفصیلات کے مطابق سابق صدرآصف علی زرداری کے قریبی دوست کو نیب میں سخت سیکیورٹی میں احتساب عدالت میں پیش کیا گیا، تفتیشی افسر نے اب تک کی تفتیش سے متعلق رپورٹ پیش کرتے ہوئے موقف اختیارکیا کہ ڈاکٹرعاصم سے منی لانڈرنگ سے متعلق معاملات میں مزید تفتیش کی جانی ہے۔ اس لئے ان کے جسمانی ریمانڈ میں مزید 7 روزکی تحقیقات کی جائے۔ڈاکٹرعاصم کے وکلا نے جسمانی ریمانڈ میں توسیع کی مخالفت کرتے ہوئے اپنے جوابی دلائل میں کہا کہ ڈاکٹرعاصم کئی ماہ سے پہلے رینجرزاورپھر پولیس و نیب کی تحویل میں رہے ہیں۔ ان سے جتنی تفتیش کی جانی یھی وہ ہوچکی ہے۔ اب ان کے ریمانڈ میں توسیع کا کوئی جواز نہیں۔عدالت نے نیب کے تفتیشی افسرکی درخواست مسترد کرتے ہوئے داکٹر عاصم کو 22 فروری تک کے لئے جیل بھجوا دیا، عدالت نے تفتیشی افسر کو ہدایت کی وہ ڈاکٹر عاصم اوردیگر ملزمان کے خلاف 22 فروری سے قبل ریفرنس دائرکرے۔ تفتیشی افسر کی جانب سے درخواست کی گئی کہ ریفربنس دائر کرنے کی مہلت میں توسیع کی جائے تاہم عدالت نے درخواست مسترد کرتے ہوئے کیس کی سماعت 22 فروری تک ملتوی کردی:۔

ڈاکٹر عاصم نیب کی تحویل سے اب جیل میں” پر ایک تبصرہ

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *