پشاورمیں چوہوں کی دہشت، 8 ماہ کا بچہ ہلاک

child pic

پشاور -صوبہ خیبرپختونخوا کے دارالحکومت پشاور میں ایک 8 ماہ کا بچہ چوہے کے کاٹنے سے ہلاک ہوگیا. بچے کے والد قاری خالد نے بتایا کہ چوہے نے اُن کے بیٹے حذیفہ کے چہرے اور ناک پر اُس وقت کاٹا، جب وہ رات کو گہری نیند سو رہے تھے. انھوں نے بتایا، 'صبح جب میری آنکھ کھلی تو میں نے ایک بڑے چوہے کو کمرے سے نکل کر بھاگتے ہوئے دیکھا، جبکہ میرا بیٹا خون میں لت پت پڑا تھا'. قاری خالد کے مطابق وہ فوری طور پر اپنے بیٹے کو لے کر قریبی ہسپتال بھاگے، جہاں ڈاکٹروں نے حذیفہ کی موت کی تصدیق کردی. انھوں نے بتایا کہ دن بھر مزدوری کے بعد وہ اتنی گہری نیند سوئے تھے کہ برابر میں ہی موجود اپنے بیٹے کو چوہے کے کاٹے جانے کا بھی انھیں علم نہ ہوسکا. ایک مقامی رہائشی مالک کے مطابق 2010 میں آنے والے سیلاب کے بعد سے یہاں چوہوں کی تعداد میں اضافہ ہوگیا ہے اور اب تب تک 5 بچے چوہے کے کاٹنے کی وجہ سے ہلاک ہوچکے ہیں.انھوں نے مزید بتایا کہ علاقے میں پائے جانے والے چوہے اتنے بڑے ہیں کہ وہ بلیوں سے بھی خوفزدہ نہیں ہوتے، علاقے کے لوگ ان چوہوں کی وجہ سے بہت پریشان ہیں اور بچوں کو گھر میں اکیلا نہیں چھوڑ سکتے.
مالک کا کہنا تھا کہ انھوں نے مقامی حکومت کو اس حوالے سے متعدد درخواستیں دی ہیں، لیکن اب تک اس مسئلے کا نوٹس نہیں لیاگیا :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *