آرمی چیف کا دورہ تاجکستان، خطے کی سیکورٹی پرتاجک صدرسے تبادلہ خیال

Tajikstan Sadar Army Chief

راولپنڈی -تاجکستان کے صدر امام علی رحمانوف کا کہنا ہےکہ آپریشن ضرب عضب میں پاک فوج کی مثالی کامیابیاں قابل ستائش ہیں اور دہشت گردی کے خلاف پاکستانی فورسز کا آپریشن دنیا کے لیے رول ماڈل ہے۔ پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق آرمی چیف جنرل راحیل شریف ایک روزہ دورے پر تاجکستان پہنچے جہاں ان کا شاندار استقبال کیا گیا۔ ترجمان کے مطابق آرمی چیف نے تاجکستان کے فوجی ہیڈکوارٹر کا دورہ کیا جہاں ان کا پرتپاک استقبال کرتے ہوئے گارڈ آف آنر بھی پیش کیا گیا جب کہ اس موقع پر جنرل راحیل شریف نے تاجک وزیر دفاع اور چیف آف جنرل اسٹاف سے بھی ملاقاتیں کیں۔ آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف نے تاجک ملٹری انسٹیٹیوٹ اور تربیتی مرکز کا دورہ کیا اور تاجک فورسز کے لیے انسداد دہشت گردی کی تربیت کی بھی پیش کش کی۔ ترجمان پاک فوج کے مطابق آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے تاجکستان کے صدر امام علی رحمانوف سے ملاقات کی جس میں علاقائی صورتحال خصوصاً دہشتگردی کےمشترکہ چیلنج پرتبادلہ خیال کیا گیا اور دونوں ملکوں کا دفاعی شعبوں میں تعاون بڑھانے پر اتفاق کیا گیا جب کہ اس موقع پر افغانستان میں جاری مفاہمتی عمل سے متعلق بات چیت کی گئی جس میں تاجک صدر نے مفاہمتی عمل میں پاکستان کے سہولت کاری کے کردار کو سراہا۔ آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف سے ملاقات میں تاجک صدر کا کہنا تھا کہ جنرل راحیل شریف کے دورے سے دونوں ملکوں میں باہمی تعاون مزید مستحکم ہوگا۔ انہوں ںے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف آپریشن ضرب عضب پوری دنیا کے لیے مثال ہے اور اس میں پاک فوج کی کامیابیاں قابل ستائش ہیں جب کہ دہشت گردی کے خلاف پاکستانی فورسز کا آپریشن دنیا کے لیے رول ماڈل ہے۔ ترجمان کے مطابق اس موقع پر جنرل راحیل شریف کا کہنا تھا کہ تاجکستان کے ساتھ تعلقات کو اہمیت دیتے ہیں جب کہ تاجکستان میں جاری دہشتگردی سے نمٹنے کے لیے تاجک فورسزکی مکمل مدد کریں گے :

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *