سرمایہ کاری کے لئے وان بفیٹ کے5اصول

buffetبفیٹ نے فورچون میگزین کو انٹرویو دیتے ہوئے سرمایہ کاری کے پانچ بنیادی اصول بیان کئے ہیں جن کا نچوڑ کچھ یوں ہے۔
1۔ ’’سرمایہ کاری کا معقول بدلہ پانے کے لئے آپ کا ماہرہونا ضروری نہیں۔‘‘ لیکن اس کے ساتھ ساتھ بفیٹ تنبیہ کرتے ہیں کہ سرمایہ کا ر کواپنی حدود کا خیال رکھنا چاہئے اور ’’اپنے معاملات کو سادہ رکھنا چاہئے۔
2۔ ’’جن اثاثوں پر آپ نظریں جمائے ہوئے ہیں ، مستقبل میں ان کی پیداواریت یا عدم پیداواریت پر زیادہ سے زیادہ اور ہر پہلو سے غور کریں۔ تاہم کوئی بھی کسی مخصوص سرمایہ کاری کے مستقبل کے امکانات کے متعلق 100فیصد پیش گوئی نہیں کر سکتا۔ ہر چیز کا علم ضروری نہیں۔ آپ کو صرف اپنے اقدامات پر توجہ مرکوز رکھنی چاہئے۔‘‘
3۔ ’’اگر آپ قیمت میں متوقع تبدیلی پر نظریں جما کر کوئی چیز خریدتے ہیں تو پھر آپ منافع کی خاطر رسک لے رہے ہیں۔‘‘ بفیٹ اچھی قیمت کی خاطر رسک لینے کے خلاف نہیں ہیں ۔ لیکن وہ زور دیتے ہیں کہ کسی اثاثے کے اچھی طرح بارآور ہونے اور اثاثے کی قیمت میں معمولی تبدیلی کی امید رکھنے میں فرق کو سمجھنے کی ضرورت ہے۔
4۔ ’’کھیلیں وہ کھلاڑی جیتتے ہیں جن کی نظریں کھیل کے میدان پر ہوتی ہیں۔۔۔ وہ نہیں جن کی نظریں سکور بورڈ سے چپکی رہتی ہیں۔ اگر آپ ہفتوں اور اتواروں کو سٹاک کی قیمتیں دیکھے بغیر گزار سکتے ہیں تو ہفتے کے دوسرے دنوں میں بھی ایسا کرکے دیکھیں، یعنی لمبے عرصے کے لئے سرمایہ کاری کرنے کی عادت اپنائیں۔‘‘
5۔ ’’ میکانکی یا کمپیوٹر کی ہدایات کی بنیاد پر رائے قائم کرنا یا مارکیٹ کے متعلق ایسی پیشگوئیوں کو سننا ، محض وقت کا ضیاع ہے۔یہ بہت خطرناک ہے کیونکہ ایسا کرنا حقائق کے متعلق آپ کی اپنی سوچ یا تاثر کودھندلا سکتا ہے۔ حالانکہ حقائق بے حد اہم ہوتے ہیں۔ لہٰذا، سی این بی سی، بلووم برگ اور فوکس بزنس وغیرہ کو خاموش کروا دیں۔‘‘
انٹر ویو کے آغاز میں، بفیٹ نے یہ پانچ اصول بیان کرنے سے قبل، کولمبیا یونیورسٹی کے معاشیات کے پروفیسر اور اپنے رہنما بن گراہم کا یہ مقولہ نقل کیا ہے ، ’’سرمایہ کاری ذہانت سے بھرپور اس وقت ہوتی ہے جب یہ واقعی کاروبارہی کی طرح کی جائے۔‘‘

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *