بل گیٹس کی امارت میں اضافہ، مائیکروسافٹ کی آمدن میں کمی!

SOFTWARE- GATESگزشتہ بیس میں سے پندرہ برس تک بل گیٹس دنیا کے امیر ترین شخص رہے ہیں۔ اپنی عظیم الشان خیراتی تنظیم کو 38بلین ڈالر دے دینے کے باوجود بل ہر سال امیر سے امیر تر ہوتے جا رہے ہیں۔
یکم مارچ 2014ء کو حاصل ہونے والے اعداد و شمار کے مطابق، بل گیٹس 76بلین ڈالرکے مالک ہیں۔یہ رقم ان کی گزشتہ برس کی دولت سے 9بلین اور6ماہ قبل کی دولت سے 4بلین ڈالر زیادہ ہے۔
ان کی مجموعی دو لت مائیکروسافٹ کے شیئر کی قیمت میں معمولی اضافے کا باعث بنی ہے، جو گزشتہ مارچ سے اب تک 10ڈالر فی شیئر تک بڑھ چکی ہے۔ لیکن اب ایک مدت سے مائیکروسافٹ ان کی آمدن میں سے زیادہ تر کا ذریعہ نہیں ہے۔ بلووم برگ بلینئر انڈیکس کے مطابق، مائیکروسافٹ کے اکاؤنٹس ، ان کی مجموعی دولت کے ایک چوتھائی سے بھی کم ہیں۔
ان کی زیادہ تر دولت ان کی سرمایہ کاری کمپنی، کیسکیڈ اِنویسٹمنٹ سے ہونے والی آمدن کا نتیجہ ہے۔سکیورٹی اینڈ ایکسچینج کمشن میں پر کئے گئے فارمز کے مطابق، کیسکیڈ انویسٹمنٹ جن اداروں میں شیئرز رکھتی ہے، ان کے نام یہ ہیں:
1۔ کینیڈین نیشنل ریلوے
2۔ برکشائر ہیتھ اوے
3۔ ڈیئر اینڈ کمپنی
4۔ لبرٹی گلوبل
5۔ ویسٹ مینجمنٹ
اور چند دیگر کمپنیاں
جریدے ، کمپیوٹر ورلڈ کے گریگ کیزیر کی رپورٹوں کے مطابق، گزشتہ دس برس کے دوران، گیٹس مائیکرو سافٹ میں اپنے شیئرز میں سے زیادہ تر فروخت کر چکے ہیں۔ بالخصوص، ستمبر 2004ء میں گیٹس کے پاس مائیکروسافٹ کے 1.1بلین شیئرتھے۔ یاہو انسائیڈر کے مطابق، رواں برس فروری کے دوران، مارکیٹ میں گیٹس کی آخری ٹریڈ تک، ان کے پاس مائیکروسافٹ کے صرف 337991164 شیئرز ہیں۔
بلووم برگ کے مطابق، گیٹس ابھی بھی مائیکروسافٹ کے4فیصد سے زیادہ شیئرز کے مالک ہیں اور ابھی تک کمپنی کے سب سے بڑے شیئر ہولڈر ہیں۔ لیکن اگر گیٹس مائیکروسافٹ کے شیئرز فروخت کرنا اسی طرح جاری رکھتے ہیں اور مزید شیئرز نہیں خریدتے تو 2015ء تک، وہ کمپنی کی تاریخ میں پہلی بار اس کے سب سے بڑے شیئر ہولڈر نہیں رہیں گے۔امکان ہے کہ ان کی جگہ سٹیو بالمر کمپنی کے سب سے بڑے شیئر ہولڈر ہوں گے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *