جنید جمشید سے دشمنی کیوں؟

junaid j
شکیل رانا
سب سے پہلے ایک بات واضح کردوں کہ نہ تو میں جنید جمشید کو معصوم سمجھتا ہوں اور نہ ہی بریلوی مسلک کے تمام پیروکاروں کو جاہل سمجھتا ہوں،کیوں کہ جس طرح ایک انسان ہونے کی حیثیت سے جنید جمشید میں خامیاں موجود ہیں اسی طرح ایک مسلمان فرقہ ہونے کی وجہ سے بریلوی مسلک میں بھی بہت سارے اچھے لوگ موجود ہیں،بات مگر یوں ہے کہ یہ جو بریلوی مسلک میں موجود کچھ کالی بھیڑیں عشقِ رسول ﷺکے نام پر بغض دیوبند کا شکار ہیں اور گزشتہ کچھ عرصے سے جنید جمشید کے پیچھے پڑے ہوئے ہیں اس کی بظاہر تین وجوہات سمجھ آتی ہیں..
پہلی وجہ یہ ہے کہ چونکہ بریلوی مسلک کا ایک متعصب طبقہ اپنے جاہل پیروکاروں کو ہمیشہ یہ باور کرواتا آرہا ہے کہ دیوبندی گستاخ رسول ہیں اور یہ نعت اور درود شریف نہیں پڑھتے ہیں،اس طبقے کی دال روٹی اسی خود ساختہ نظریے پر قائم ہے،اب جب جنید جمشید ٹیلی ویژن پر آکر نعت بھی پڑھے گا اور دروداذ کارد بھی کرے گا تو اس طبقے کی دال روٹی کا کیا بنے گا؟
دوسری وجہ یہ ہے کہ یہی طبقہ نام نہاد مدنی تقیے بناکر اور کھیرے کاٹ کر پوری دنیا میں اسلام کی جگ ہنسائی کررہا ہے،جب کہ جنید جمشید پوری دنیا میں گھوم کر اسلام کی تعلیمات پھیلا رہا ہے اور جنید جمشید اپنے سابقہ بیک گراؤنڈ کی وجہ سے ایک معروف شخصیت ہیں،جس کی وجہ سے لاکھوں لوگ اسے ٹیلی ویژن پر اور براہ راست سنتے ہیں تو اس طبقے کی دال روٹی وہاں بھی خطرے سے دوچار ہوتی ہے تو یہ جنید جمشید کے خلاف نہیں ہوں گے تو کیا عامر لیاقت کے خلاف ہوں گے؟
تیسری وجہ یہ ہے کہ جنید جمشید تبلیغی جماعت میں آنے کے بعد چونکہ گانے چھوڑ کر نعتیں پڑھ رہا ہے جس کی وجہ سے نعت خوانی پر اس طبقے کی اجارہ داری ختم ہورہی ہے تو غصہ آنا تو فطری سی بات ہے نا بھائی؟
مجھے تو بس جنید جمشید سے دشمنی کی یہی وجوہات نظر آرہی ہیں،ورنہ جنید جمشید کے خلاف گستاخ امی عائشہ( رضی اللہ عنہا) کا فتویٰ جاری کرنے والا ثروت اعجاز قادری واقعی اگر حب صحابہ سے سرشار ہے تو پھر وہ اپنے "مشکل کشا شریکوں"  کے ہاتھوں میں ہاتھ ڈال کر اظہارِ یکجہتی کا اظہار کرتا کیوں پھر رہا ہے؟

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *