ترک وزیر اعظم نےٹوئٹر پر پابندی لگا دی

ardaganترکی کے وزیراعظم رجب طیب اردگان کی جانب سے سماجی رابطوں کی ویب سائٹز بند کرنے کی دھمکی دینے کے بعد جمعرات کی رات ملک میں ٹوئٹر پر پابندی عائد کردی گئی۔
دوسری جانب ٹوئٹر کی پبلک پالیسی نے اس کے ردِ عمل میں اپنے صارفین سے کہا ہے کہ وہ موبائل فون کے ذریعے ٹوئٹر سروس استعمال کرسکتے ہیں۔
اپوزیشن میڈیا کا کہنا ہے کہ ترک وزیراعظم رجب طیب اردگان کی جانب سے اس پابندی کی منظوری دی گئی۔
خیال رہے کہ اس سے قبل وزیراعظم نے ایک ریلی کے دوران بتایا تھا کہ وہ ملک سے ٹوئٹر کا خاتمہ کردیں گے۔
ترکی کی سرکاری نیوز ایجسنی کے مطابق انتظامیہ نے تکنیکی طور پر ملک میں ٹوئٹر تک رسائی کو بلاک کیا ہے، کیونکہ اس نے کچھ "لنک" سائٹ سے ہٹا کر ترکی کی مختلف عدالتوں کے احکامات کی خلاف وزری کی تھی۔
یاد رہے کہ تیس مارچ کے لوکل انتخابات میں ووٹرز کی حمایت حاصل کرنے کے لیے گزشتہ روز ایک ریلی کا انعقاد کیا گیا، جس میں رجب طیب اردگان نے اپنے حامیوں کو بتایا کہ ہم ٹوئٹر سروس بند کریں گے اور اس فیصلے پر وہ عالمی برداری کی بھی پروا نہیں کریں گے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *