ایڈز کے مریض کا سسرال میں قتل

murder

بریلی -ہندوستانی ریاست اتر پردیش کی تحصیل بھوجی پورا میں ایچ آئی وے ایڈز کے شکار ایک 40 سالہ شخص کو مبینہ طور پر اس کی اہلیہ اور سسرال والوں نے قتل کردیا. ٹائمز آف انڈیا کی ایک رپورٹ کے مطابق مذکورہ شخص تقریبآ ڈیڑھ سال سے بیماری کے باعث اپنے سسرال میں رہائش پذیر تھا، جہاں بدھ کو وہ 'پراسرار حالات' میں مردہ پایا گیا. پولیس کی تفتیش میں انکشاف ہوا کہ متاثرہ شخص نے بدنامی کے ڈر سے اپنی بیماری کو خفیہ رکھا اور اینٹی ریٹرو وائرل تھراپی (اے آر ٹی) مرکز میں کاؤنسلنگ کے لیے جاتا رہا. پولیس کے مطابق مذکورہ شخص کی اہلیہ اور سسرال والے اُس کی موت کی کوئی تسلی بخش وجہ بتانے میں ناکام رہے اور پولیس کو اطلاع دینے کے بجائے انھوں نے مقتول کے خاندان کو مطلع کرکے اس کی آخری رسومات کی تیاریاں شروع کردیں. مذکورہ شخص کے اہلخانہ نے اس کے سسرال پہنچ کر پولیس کو اطلاع دی کہ انھوں نے اس کے جسم پر زخموں کے نشان دیکھے ہیں.

جمعرات کو جاری کی گئی پوسٹ مارٹم رپورٹ میں انکشاف ہوا کہ مذکورہ شخص کو قتل کیا گیا جبکہ واقعے کا مقدمہ مقتول کی اہلیہ، سسر اور دیگر 2 افراد کے خلاف درج کرلیا گیا. بھوجی پور پولیس اسٹیشن کے انسپکٹر جے پی یادیو کا کہنا تھا، 'متاثرہ خاندان کے بیان کی روشنی میں بظاہر لگتا ہے کہ مقتول کی اہلیہ اور ان کے سسر ایک ایڈز کے مریض کو اپنے گھر میں رکھ کر بدنامی کا بوجھ نہیں اٹھاناچاہتے تھے، جس کی وجہ سے انھوں نے اسے قتل کردیا'. یادیو کا مزید کہنا تھا کہ مقتول کی اہلیہ، اس کے سسر اور دیگر 2 افراد کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کیا گیا ہے لیکن تاحال کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *