بدعنوان سیاستدانوں اورافسران کولوٹنےوالا گروہ گرفتار

Rangers

کراچی -سندھ رینجرز نے ایک ایسے گروہ کو گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا ہے جو کہ 18 بدعنوان سیاستدانوں، پولیس حکام اور سرکاری افسران کو لوٹ چکا ہے۔ رینجرز کی جانب سے جاری کیے گئے اعلامیے میں کہا گیا ہے کراچی اور اندرون سندھ کارروائی کے مختلف علاقوں میں کارروائی کرکے ایک منظم گروہ کو گرفتار کیا گیا۔

اس گروہ نے بوٹ بیسن میں ایک شخص سے ایک کروڑ روپے طلب کیے تھے۔ اعلامیے کے مطابق رینجرز کو بھتہ طلب کرنے کی شکایت موصول ہوئی تھی، جس کے بعد اس گروہ کی ٹیکنیکل مانیٹرنگ کے ساتھ ساتھ دیگر سرگرمیوں کی نگرانی شروع کر دی گئی، 3 ماہ تک جاسوسی کے بعد رینجرز نے 7 رکنی گروہ کو گرفتار کیا۔ رینجرز کا کہنا ہے کہ اس گروہ کے سرغنہ کا نام شفیق ہے جبکہ دیگر ارکان میں خالد سولنگی، اللہ ودھایو، اختر موجائی، سجاد راجپر، فرحان راجپر اور مہتاب راجپر شامل ہیں۔ اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ یہ گروہ اخبارات میں شائع ہونے والی بدعنوانی کے حوالے سے خبروں میں سے کرپشن میں ملوث افراد کے مکمل کوائف سیکریٹریٹ اور ڈسٹرکٹ کو آرڈینیشن (ڈی سی) آفسز سے تصدیق کرتے تھے، بعد ازاں ان افراد کو مقدمات میں نرمی کا جھانسہ دے کر رقم بٹورتے تھے۔ رینجرز کا کہنا ہے کہ یہ گروہ سیاستدانوں، ضلعی انتظامیہ کے سینئر افسران اور پولیس حکام سے کروڑوں روپے بٹورنے کی 18 وارداتیں کر چکا ہے۔ کرپٹ افسران کو بے وقوف بنانے کے لیے یہ گروہ بیرون ملک سے کالنگ کارڈ درآمد کرکے کال کرتا تھا اور کرپٹ عناصر سے سینئر افسر بن کر بات کی جاتی تھی، اس ٹیلی فون کال کے ذریعے ہی جھانسہ دے کر بڑی رقوم وصول کرنے کی تصدیق رینجرز نے اعلامیے میں کی ہے۔ رینجرز کے اعلامیے کے مطابق ملزمان سے بھتے کی رقم، ایک رائفل (ایم پی فائیو) ، 4 پستول، 2 موٹرسائیکلیں اور ایک گاڑی برآمد کی گئی۔ عدالتی کارروائی کے حوالے اعلامیے میں کہا گیا کہ ملزمان کو انسداد دہشت گردی کی دفعات کے تحت گرفتار کیا گیا جبکہ مزید قانونی چارہ جوئی کے لیے ان افراد کو پولیس کے حوالے کر دیا گیا ہے :-

Source: Dawn News

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *