عیسائیوں کی ایک ایسی مقدس ترین جگہ ، جس کی حفاظت مسلمان کرتے ہیں

esai

عیسائی مذہب کی زیادہ تر مقد س عمارتیں یروشلم میں واقع ہیں۔ ان میں سب سے اہم وہ چرچ ہے جہاں عیسائی عقائد کے مطابق عیسی ؑ کو صلیب پر چڑھایا گیا تھا۔ وہیں پہ عیسی کو دفن بھی کیا گیا اور بعد میں زندہ کیا گیا ۔ بہت کم لوگ یہ جانتے ہیں کہ اس سب سے اہم عمارت کا سب سے اہم دروازہ کھولنے کی ذمہ داری ایک مسلمان کو دی گئی ہے۔ عیسائی قبیلوں سے تعلق رکھنے والے دو مسلمان ہیں جنہیں یہ مقدس زمہ داری سونپی گئی ہے۔ ۱۲۰۰ عیسوی کے بعد سے اس چرچ کی حفاظت کی ذمہ داری مسلمانوں کے سر ہے جسے وہ بخوبی نبھا رہے ہیں۔۶۳۷ میں حضرت عمر نے شروشلم کے بشپ سے  عیسائی عبادت گاہوں کی حفاظت کا وعدہ کیا  اور اس حفاظت کی ذمہ داری مدینہ سے آئے ایک خاندان کو سونپی جو حضور ﷺ کے بہت قریبی تھے۔ ۱۱۸۷ میں صلاح الدین نے یہ ذمہ داری پھر اسی خاندان کے سپرد کی۔ اور تب سے اس وقت تک یہ ذمہ داری مسلماں بہت شوق سے ادا کر رہے ہیں۔ اس کا دوسرا مقصد عیسائی فرقوں کے مابین اس چرچ کی حفاظت پر جھگڑے سے بچائو بھی ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *