4G,3G اسپیکٹرم کی نیلامی: بولی 90 کروڑ20 لاکھ ڈالرز تک پہنچ گئی

پاکستان ٹیلی کمیونی کیشن اتھارٹی کی جانب سے 3G اور 4G 3G-4Gاسپیکٹرم کی نیلامی جاری ہے تاہم 6 مراحل مکمل ہونے کے بعد بھی اب تک ان لائسنسوں کی مجموعی بولی 90 کروڑ 20 لاکھ 28 ڈالرز سے آگے نہ بڑھ سکی۔

اسلام آباد کے مقامی ہوٹل میں تھری جی کے 3 جبکہ فور جی کے 2 لائسنس کی نیلامی کا عمل جاری ہے جس میں ملک کی 4سیلولر کمپنیاں حصہ لے رہی ہیں، تھری جی اسپیکٹرم کے ایک لائسنس کی بنیادی قیمت 29 کروڑ 50 لاکھ ڈالر جبکہ فور جی اسپیکٹرم کے ایک لائسنس  کی بنیادی قیمت 21 کروڑ ڈالرز رکھی گئی ہے،یہ لائسنس 15 سال کی مدت کے لئے جاری کئے جارہے ہیں، 4جی لائسنس کی بولی میں حصہ لینے کے لئے تھری جی لائسنس لینا ضروری ہے، کامیاب بولی دہندہ کو 50 فیصد ادائیگی 30 دن اور بقایا ادائیگی 5 سال میں مساوی قسطوں میں کرنا ہوگی۔ پی ٹی اے کو امید ہے کہ ان لائنسنسز کی فروخت سے ایک ارب 30 کروڑ ڈالر تک رقم حاصل ہوگی۔

نیلامی کے آغاز سے قبل تمام پارٹیوں نے کم سے کم بنیادی رقم پر اپنی پیش کشیں جمع کرائی جس کے بعد بولی میں حصہ لینے والی کمپنیوں کو مختلف نشانات الاٹ کئے گئے، پیش کش جمع ہونے کے بعد الیکٹرانک سسٹم کے ذریعے جیتنے والے کا اعلان کیا جائے گا، چیئرمین پی ٹی اے  ڈاکٹر اسماعیل کا کہنا ہے کہ تھری جی اور فور جی کی نیلامی میں پارٹیز کی جانب سے بنیادی قیمت سے کہیں زیادہ پیشکش ملی ہیں، نیلامی کے اب تک 6 مراحل مکمل ہوچکے ہیں، مجموعی طور پر بولی 90 کروڑ 20 لاکھ  28 ہزار ڈالرز پر پہنچ گئی ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *