فلم 'فروزن مووی' کی پرستار چھ سالہ بچی سگے باپ کے ہاتھوں قتل

bachi

"فروزن مووی" میں ایلسا کا کردار نبھانے کی خواہش مند ڈزنی کی پرستار 6 سالہ لڑکی کو اس کے باپ نے قتل کر دیا۔ باپ نے بیٹی کوقتل کرنے کے بعد گھریلو کتوں کو اور پھر اپنے آپ کو بھی مار ڈالا۔ یہ واقعہ بچی کی ماں اور باپ کےبیچ علیحدگی کے بعد پیش آیا۔ کیزیا فلکس ایڈمنڈ اپنے باپ کی لاش کے پاس بے ہوشی کی حالت میں پائی گئیں۔ ڈزنی کی پاگل پن کی حد تک پرستار کو فوری ہسپتال لے جایا گیا لیکن وہ  کچھ دیر لڑنے کے بعد زندگی کی بازی ہار گئیں۔

محلہ داروں نے بتایا کہ اس کو فروزن مووی بہت پسند تھی اور وہ بڑی ہو کر ایلسا بننا چاہتی تھی۔ گھر کے اندر دو کتوں کی لاشیں بھی ملی ہیں۔ کیزیا کے باپ اور ماں کے درمیان اسی سال علیحدگی ہو گئی تھی۔ لڑکی ڈزنی پرنسس کے نام سے مشہو ر تھی اور ایلسا اس کا پسندیدہ کردار تھا۔ کوزیا کا والد فیس بک پر بہت پریشانی کی حالت والے مسیج شئیر کرتا رہا ہے جس میں اس نے لکھا ہے کہ مجھے سمجھ نہیں آتی میں کیا کروں۔ لڑکی کے پسندیدہ ڈزنی کھلونے اور مکی مائوس  اور ڈونلڈ ڈک  اس کے گھر کے پاس رکھ دیے گئے ہیں جہاں اس کی وفات ہوئی ہے۔ 6 سالہ بچی کی یاد میں گھر کے باہر شمیعیں جلا کر اظہار  افسوس کیا جائے گا۔

بتایا جاتا ہے کہ علیحدگی کے بعد نکی اور کوزیا ایک گھر میں رہتی تھیں جب کہ بچی کا والد کہیں اور رہ رہا تھا۔ ایک دن جب نکی کام سے واپس گھر آئی تو اسے یہ سب دکھائی دیا۔ کیزیا کی کلاس 1 کی ٹیچر نے بچی کی وفات پر اظہار افسوس کرتے ہوئے ایک ٹی شرٹ سکول کی ٹی شرٹ اس کے گھر کے پاس رکھی ہے۔ شرٹ پر افسوس بھرا میسج بھی تحریر کیا گیا ہے۔ بہت سے لوگوں نے بھی بچی کے لیے تعزیتی پیغامات  بھیجے ہیں۔ بچی کو فروزن فلم بہت پسند  تھی اور وہ اس فلم کے سارے گانے گنگناتی رہتی تھی -

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *