ترک عوام نے باغی فوجی کا سر تن سے جدا کردیا

Beheaded Soldier

انقرہ -ترکی میں ہونے والی بغاوت پر عوام کے شدید ردعمل کے بعد صورتحال ایک دم پلٹا کھا گئی اور یوں محسوس ہوا کہ فوج نے عوامی حکومت پر نہیں بلکہ’ عوام نے فوج پر حملہ کردیا‘ ہے۔مختلف میڈیا چینلز پر نشر ہونے والی ویڈیوز میں دیکھا جاسکتا ہے کہ ترک عوام نے ملکی جمہوریت کو پٹڑی سے ہٹانے کی کوشش کرنے والوں کو خوب زدو کو ب کیا،کہیں کسی باغی کے منہ پر پنچ ماراگیا تو ایک شہری نے باغیوں کو اپنے بیلٹ سے پیٹ پیٹ کر اپنی بھڑاس نکالی۔ بغاوت کے خلاف عوام کا شدید رد عمل اس بدقسمت باغی کو سہنا پڑا جس نے بغاوت ناکام ہونے پرباسفورس پل پرسرینڈر کر دیا لیکن حکومت کے حامی شاید باغیوں کو معاف کرنے پر تیار نہ تھے اور اس کو وہیں شدید تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔ سوشل میڈیا پر جاری ہونے والی تصاویر اور ویڈیوز میں دیکھا جا سکتا ہے ایک گروپ نے ایک زخمی فوجی کو گھیرے میں لےکر شدید تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے اس کا سر قلم کرکے اسے عبرت کا نشان بنا دیا۔ سوشل میڈیا پر آنے والی ان کی خون میں لت پت لاش وائرل ہو گئی جب کہ کئی لوگوں نے حکومت کے حامیوں کوتنقیدکا نشانہ بھی بنایا :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *