آزاد کشمیر انتخابات میں پولنگ کا عمل فوج کی زیرنگرانی جاری

ُ

مظفر آباد -آزاد کشمیر قانون ساز اسمبلی کیلئے عام انتخابات کیلئے پولنگ کا عمل شروع ہو گیا ہے جو شام 5بجے تک بغیر کسی وقفے سے جاری رہے گی ۔10اضلاع میں41نشستوں پر 423امیدوار میدان میں ہیں۔ انتخابات کے دوران پاک فوج اور پولیس کے علاوہ دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکار تعینات کیے گئے ہیں جبکہ 1450پولنگ سٹیشنز کو حساس قرار دیا گیا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق آزاد کشمیر میں قانون ساز اسمبلی کیلئے10 اضلاع میں انتخابات آج ہو رہے ہیں جس کیلئے ووٹنگ کا عمل شرو ع ہو گیا ہے۔ ووٹنگ کا عمل بغیر کسی وقفے سے شام 5بجے تک جاری رہے گا جبکہ تمام پولنگ سٹیشنر کے اندر اور باہر فوج اور پولیس تعینات ہے۔ آزاد کشمیر قانون ساز اسمبلی میں کل 49نشستیں ہیں تاہم آج 41نشستوں پر براہ راست انتخابات ہو رہے ہیں جبکہ باقی 8نشستوں پر ارکان اسمبلی رائے دہی کریں گے۔

آزادکشمیر کی دسویں قانون ساز اسمبلی کی 41نشستوں پر 423امیدوار میدان میں ہیں جہاں عوام براہ راست اپنے نمائندوں کا چناﺅ کر رہے ہیں۔ آزاد کشمیر میںرجسٹرڈووٹروں کی تعداد22لاکھ35ہزار702ہےجن میں مردووٹروں کی تعداد12لاکھ28ہزار930جبکہ خواتین ووٹروں کی تعداد10لاکھ6ہزار772ہے۔آزادکشمیراسمبلی میں8مخصوص نشستیں ہیں، 5نشستیں خواتین،ایک ٹیکنوکریٹ،ایک علما مشائخ اورایک اوورسیزپاکستانی کیلیےمخصوص ہے۔ آزاد کشمیر انتخابات میں 26سیاسی جماعتیں حصہ لے رہی ہیں تاہم پاکستان پیپلز پارٹی نے تمام 41نشستوں پر اپنے امیدوار کھڑے کئے ہیں جبکہ مسلم لیگ نواز نے 38اور تحریک انصاف نے 32حلقوں میں اپنے امیدوار نامزد کیے ہیں اس کے علاوہ مسلم کانفرنس کی جانب سے 23جبکہ جے یو آئی کے 8اور ایم کیو ایم اور ایم ڈبلو ایم اے کے6,6,سنی اتحادکونسل کے12،جماعت اسلامی کے9امیدوارمیدان میں ہیں ۔اس کے علاوہ مختلف حلقوں میں 204آزاد امیدورا بھی انتخابات لڑ رہے ہیں ۔12امیدواروں کاانتخاب پاکستان میں مقیم کشمیری کررہے ہیں جبکہ 29امیدواروں کاانتخاب آزادکشمیرکے عوام کررہے ہیں۔

اس کے علاوہ آزاد کمشیر انتخابات کے سلسلے میں کراچی ، لاہور  اورراولپنڈی میں بھی پولنگ ہو رہی ہے۔چیف سیکرٹری آزاد کمشیر سکندرسلطان کا کہنا ہے کہ پولنگ پرامن ماحول میں جاری ہےاور کوئی جعلی ووٹ کاسٹ نہیں ہو سکتا۔ ناخوشگوارواقعات سےنمٹنےکیلیےپوری طرح تیارہیں :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *