غزل

اب کہاں پہ ایماں ہے اور کہاں مسلماں ہےحاصلِ سکوں کوئی اور نہ کوئی درماں ہے کوئی ہے نہ ایوبی

error: